زیات آپریشن میں مارا جانیوالا ظہیر احمد منظر عام پر آگیا

زیات آپریشن میں مارا جانیوالا ظہیر احمد منظر عام پر آگیا

  

کوئٹہ(این این آئی) پاکستان پیپلزپارٹی کے رہنما ء سردار نور احمد بنگلزئی نے کہا ہے کہ زیات آپریشن میں مارے جانیوالے لاپتہ ظہیر احمد منظر عام پر آگیا اورمیرے ہمراہ میڈیا کے سامنے موجود ہے لواحقین نے لاش کو شناخت کے بغیر دفن کیا تھا ظہیر احمد زندہ صحیح سلامت ہے،زیارت میں کرنل لئیق اور انکے کزن کو قتل کیا گیا جس کے بعد علاقے میں آپریشن کو غلط رنگ دیا جارہا ہے،ماما قدیر اور انکے ساتھی اپنے مقاصد حاصل کرنا چاہتے ہیں کرنل لئیق اور دیگر شہدا ء کیلئے بھی عدالتی کمیشن قائم کیا جائے تاکہ لاپتہ افراد کے نام پر دھوکہ دینے کا سلسلہ بند ہو سکے اور حقائق سامنے لائے جا سکیں، یہ بات انہوں نے جمعہ کو اپنی رہائشگاہ پر لاپتہ قرار دئے جانے والے ظہیر احمد بنگلزئی اور انکے بھائیوں خور شید احمد بنگلزئی اور میر غلام حیدر بنگلزئی کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہی اس موقع پرظہیر احمد نے کہا کہ دوست کے ساتھ ویزا کے بغیر بیرون ملک ایران چلا گیا تھا بعد میں ایرانی فورسسز نے غیر قانونی داخلے پر پکڑا اور نو ماہ جیل میں قید رکھا آٹھ نو ماہ بعد آنکھوں پر پٹیاں باندھ کر پاکستانی سرحد پر چھوڑ دیاگیا استعمال کیا جا تا ہے۔

 لاپتہ ظہیر احمد 

مزید :

صفحہ آخر -