پولیو مہم میں کوتاہی پر ڈی ایچ او تبدیل 2 اہلکار معطل

 پولیو مہم میں کوتاہی پر ڈی ایچ او تبدیل 2 اہلکار معطل

  

بنوں (بیورورپورٹ)ضلع شمالی وزیرستان میں پولیو مہم میں کوتاہی اور فیک فنگر مارکنگ پر ڈی ایچ او تبدیل دو اہلکار معطل 52 کو او ایس ڈی اور 121کے خلاف شوکاز نوٹس جاری کئے ہیں آبادی کم اورعلاقہ بڑے رقبہ پر پھیلا ہوا ہے مشکلات بہت زیادہ لیکن ان شاء اللہ ہم کامیاب ہونگے۔کمشنر بنوں ڈویژن ارشد خان نے اپنے دفتر میں خصوصی گفتگو کے دوران بتایا کہ شمالی وزیرستان کے حالات دیگر اضلاع سے بالکل مختلف ہیں تقریبا15بیس سالوں سے یہ علاقہ حالت جنگ میں رہا ہے افغانستان کے ساتھ 182کلومیٹر پر مشتمل بہت بڑا بارڈر پاکستان کا لگتا ہے قبائل کے کچھ لوگ افغانستان میں اور کچھ لوگ پاکستان میں آباد ہیں جو رشتہ دار ہیں انکے آپس میں آنا جانا رہتا ہے اور اسکو مکمل طور پر بند نہیں کیا جاسکتا انکا کہنا تھا کہ یہاں کے حالات بالکل مختلف ہیں قومی پولیو مہم کو ناکام بنانے کیلئے ملک دشمن عناصر سر گرم رہتے ہیں تاکہ مہم کامیاب نہ ہو اس وجہ سے یہ عناصر پولیو ورکر اور سیکورٹی اہلکاروں پر حملے کرتے ہیں اور مہم کے دوران ورکرز یا اہلکاروں کو شہید کرتے ہیں ہم تمام وسائل بروئے کار لاتے ہیں یہاں تک کہ ورکرز کی سیکورٹی کیلئے گن شپ ہیلی کاپٹرز سے نگرانی کی جاتی ہے لیکن علاقہ بہت بڑا 4770کلو میٹر پر مشتمل ہیں اور آبادی بہت کم ہیں۔ہم تمام تر سہولیات کی فراہمی کیلئے ہر وقت مصروف رہتے ہیں لیکن یہاں یکسر مختلف حالات ہیں ہر مہم کی سخت نگرانی کی جاتی ہے قومی پولیو مہم میں کوتاہی پر ڈی ایچ او کو ضلع سے تبدیل جبکہ فیک فنگر مارکنگ میں ملوث 2اہلکاروں کو معطل 52کو او ایس ڈی بنا دیا گیا ہے جبکہ 121کو شوکاز نوٹس جاری کئے ہیں اور انکے خلاف کاروائی عمل میں لائی جارہی ہے پولیو ایمرجنسی سنٹر اور صوبائی سطح پر مانیٹرنگ کرنے والوں سے میری درخواست ہے کہ بار بار مہم کی نگرانی کرے اور نئے طریقوں سے گھر گھر اور بچے بچے کو پولیو کے قطرے پہنچانے اور پلانے کو یقینی بنائیں۔ انہوں نے اس عزم کا اظہار کیا کہ انشاء اللہ جس طرح باقی اضلاع سے پولیو کا خاتمہ کیا گیا ہے شمالی وزیرستان سے بھی بہت جلد اسکا خاتمہ کیا جائیگا  

مزید :

پشاورصفحہ آخر -