عدلیہ کا فیصلہ جمہوریت کا قتل ہے: سینیٹر روبینہ خالد

  عدلیہ کا فیصلہ جمہوریت کا قتل ہے: سینیٹر روبینہ خالد

  

       پشاور(سٹی رپورٹر) پاکستان پیپلز پارٹی خواتین ونگ کی صوبائی صدر سینیٹرروبینہ خالدنے کہا ہے کہ بدقسمتی سے ملک میں بار بارآئین کو کمزور کرنے کی کوششیں ہوئی ہیں،عدلیہ کافیصلہ جمہوریت کاقتل ہے ان خیالات کا اظہار پاکستان پیپلز پارٹی خواتین ونگ کی صوبائی صدر سینیٹرروبینہ خالدنے سپریم کورٹ کے گزشتہ روز فیصلے کے حوالے سے بیان میں کیا سینیٹرروبینہ خالد نے کہا کہ ملک کی اعلی عدلیہ کی طرف سے اس طرح کے فیصلے پارٹی صدر یا سربراہ کی اہمیت کو ختم کرنے کے مترادف ہیں،انصاف کا سب سے بڑا ادارہ اگر متنازعہ بنے گا تو یہ پورے ملک کی بدقسمتی ہوگی  پاکستان پیپلز پارٹی خواتین ونگ کی صوبائی صدر سینیٹرروبینہ خالد نے کہا کہ سیاسی معاملات عدالتوں میں جانا اچھی روایت نہیں،جو سیاسی فیصلے سیاستدانوں نے کرنے تھے، آج عدالتیں کررہی ہیں۔عمران خان پہلے اداروں پرتنقید کرتے ہیں اس کے بعد ریلیف مانگتے ہیں،نیازی  کیساتھ آج بھی لاڈلے جیسابرتاؤہورہاہے سینیٹرروبینہ خالدنے کہا کہ عدلیہ، پارلیمان اور فوج سمیت تمام اداروں کو اپنے دائرہ اختیار میں رہ کر کام کرنا ہوگا۔انہوں نے کہا کہ آئین وقانون اورپارلیمنٹ کی بالادستی اورجمہوریت کی بقائکیلئے پاکستان پیپلزپارٹی کے قائدین نے ہمیشہ جدوجہد کی ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -