نوجوان نسل کو منشیات سے بچانے کیلئے اقدامات ضروری، ڈاکٹرسلیمان طاہر،ڈی جی اینٹی نارکوٹیکس سے ملاقات،مختلف امور پر تبادلہ خیال

نوجوان نسل کو منشیات سے بچانے کیلئے اقدامات ضروری، ڈاکٹرسلیمان طاہر،ڈی جی ...

  

رحیم یار خان(بیورو رپورٹ)وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر محمد سلیمان طاہر اور ڈائریکٹر جنرل اینٹی نارکوٹکس فورس میجر(بقیہ نمبر18صفحہ6پر)

 جنرل غلام شبیر نی ریجو کے درمیان ملاقات ہوئی جس میں ایگزیکٹوز، طلبا و طالبات سمیت قوم میں نشے کی بڑھتی ہوئی لت پر تشویش کا اظہار کیا گیا۔ میجر جنرل غلام شبیر نے کہا اے این ایف منشیات کے خلاف قانون نافذ کرنے والا پاکستان کا اولین ادارہ ہونے کی حیثیت سے اپنے فرائض کو پورا کرنے کیلئے مکمل طورپر پر عزم اور منشیات کے اسمگلروں کو گرفتار کرنے اور انہیں انصاف کے کٹہرے میں لانے کیلئے سرگرم عمل ہے۔ ڈی جی اے این ایف نے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر محمد سلیمان طاہر کی جانب سے خواجہ فرید یونیورسٹی آف انجینئرنگ اینڈ انفارمیشن ٹیکنالوجی میں اٹھائے گئے اقدامات کو سراہا۔ انہوں نے کہا کہ یہ انتہائی خوش آئند ہے کہ خواجہ فرید یونیورسٹی منشیات کے خاتمے میں اپنا کردار ادا کر رہی ہے نوجوان نسل کو نشے کی لت سے بچانے کے لئے انہی اقدامات کی ضرورت ہے کیونکہ نوجوان ہی اس ملک کا مستقبل ہیں اگر وہ محفوظ رہے تو ملک کا مستقبل بھی محفوظ رہے گا۔ انہوں نے کہا خواجہ فرید یونیورسٹی نو سموکنگ، نو ڈرگز کی قابل تقلید مثال پر عمل پیرا ہے جس کی دیگر اداروں کو بھی پیروی کرنی چاہئے۔ اس موقع پر وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر محمد سلیمان طاہر نے منشیات کے خاتمے کے لئے ڈائریکٹر جنرل اینٹی نارکوٹکس فورس میجر جنرل غلام شبیر نیریجو کے اقدامات کو سراہتے ہوئے کہا کہ یہ اے این ایف کی کارکردگی کا ثبوت ہے کہ پاکستان 2001 سے پوست سے پاک ملک کا درجہ رکھتا ہے۔ وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر سلیمان طاہر نے بتایا کہ خواجہ فرید یونیورسٹی میں سگریٹ نوشی اور منشیات کے استعمال کے حوالے سے زیرو ٹالرنس پالیسی اپنائی گئی ہے۔کسی شخص کو جامعہ میں ایسی کسی سرگرمی کی اجازت نہیں ہے۔ اساتذہ ہوں یا طلبا و طالبات کوئی بھی اس پابندی سے مستثنی نہیں ہیں۔ بچوں کے لیے صحت افزا سرگرمیوں کا ماحول پیدا کیا جائے۔ انہیں کھیلوں انہوں نے کہا والدین کو چاہیے کہ بچے کے معمولات کی سختی سے نگرانی کریں اور بری صحبت سے بچائیں۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -