ایکسا ئز اینڈ ٹیکسیشن مو ٹر برانچ میں ایجنٹو ں کا راج سائلین ُرلنے لگے

ایکسا ئز اینڈ ٹیکسیشن مو ٹر برانچ میں ایجنٹو ں کا راج سائلین ُرلنے لگے

لاہور ( شہباز اکمل جندران) ایکسائز اینڈٹیکسیشن ڈیپارٹمنٹ لاہور کی موٹر برانچ میں ایجنٹوں کا راج، سائلین رلنے لگے ، جہاں ای ٹی او موٹر ز سائلوں کی بجائے صرف ایجنٹوں کے کیس نمٹا تے ہیں اور عام سائلوں کی فائلوں پر یا تو اعتراض لگا دیئے جاتے ہیں یاپھر ان کے کیس لٹکا دیئے جاتے ہیں، جس کے باعث موٹر برانچ میں زیر التوا کیسوں کی تعداد 10ہزار سے تجاوز کرنے لگی ہے۔ روز نامہ پاکستان کی طرف سے کئے جانے والے سروے میں شہری پھٹ پڑے ، روز نامہ پاکستان نے گزشتہ روز ایکسائز اینڈ ٹیکسیشن ڈیپارٹمنٹ لاہور آفس کی موٹر برانچ کا سروے کیا جہاں عوام الناس نے محکمے اور محکمے کے ملازمین کے خلاف شکایات کے انبار لگا دیئے، اسلام پورہ کے جاوید سلیم کا کہنا تھا کہ وہ اپنی گاڑی کی ٹرانسفر کے لئے چار دنوں سے چکر کاٹ رہا ہے لیکن ای ٹی او موٹرز شیخ اخلاق احمد اس کی گاڑی ٹرانسفر نہیں کررہے۔صفانوالا چوک کے اظہر حسین کا کہنا تھا کہ وہ نئی موٹرسائیکل کی رجسٹریشن کے لئے دو دنوں سے آرہا ہے لیکن اس کی باری نہیں آرہی، پہلے دن وہ صبح ساڑھے 8بجے آیا اور اسے 16نمبر ٹوکن دیا گیا لیکن دن بھر بیٹھے رہنے کے باوجود اس کی باری نہ آسکی، آج وہ دوسری بار آیا ہے، دیکھیں آج اس کی موٹر سائیکل جسٹرڈ ہوتی ہے یا کہ نہیں، اچھرہ کے طیب رشید کا کہنا تھا کہ اس نے اپنے دوست سے ٹیوٹیا ایکس ایل آئی گاڑی خریدی ہے اور گاڑی کو اپنے نام منتقل کروانا چاہتا ہے اس کی فائل مکمل ہے کسی قسم کا کوئی اعتراض نہیں ہے لیکن پھر بھی ای ٹی او شیخ اخلاق احمد نے فائل اپنے پاس رکھ چھوڑی ہے، عملے سے پوچھو تو جواب ملتا ہے کہ صاحب کی مرضی ہے جب چاہیں فائل فارورڈ کریں، کچھ اسی نوعیت کی شکایت جیل روڈ کے اکبر زیدی کی تھی جس کا کہنا تھا کہ پچھلے ایک ہفتے سے وہ گاڑی کی ٹرانسفر کے لئے چکر کاٹ رہا ہے لیکن تمام تر دستاویزات کی تکمیل کے باوجود گاڑی ٹرانسفر نہیں کی جارہی۔ اندرون بھاٹی گیٹ کے اشفاق علی کا کہنا تھا کے موٹر برانچ میں صرف رشوت چلتی ہے اگر آپ رشوت دیتے ہیں تو آپ کا کام فوری ہوجاتا ہے اور اگر رشوت نہیں دیتے تو آپ کو انتظار کرنے کو کہہ دیا جاتا ہے، دھوبی گھاٹ پرانی انارکلی کے اقبال بٹ کا کہنا تھا کہ ای ٹی او موٹر ز شیخ اخلاق احمد چہیتے ایجنٹوں کے کیس فوری نمٹا دیتے ہیں، لیکن عام سائلوں کو کل آنے کا کہہ دیا جاتا ہے۔ اس کا کہنا تھا کہ وہ پچھلے پانچ دنوں سے گاڑی کی ٹرانسفر کے لئے چکر کاٹ رہا ہے لیکن کیس اعتراض کے بغیر بھی اس کی گاڑی ٹرانسفر نہیں کی جارہی لیکن بعض ایسے بھی لوگ موٹر برانچ میں آتے ہیں، جو ای ٹی او مذکور سے فوری کام کروانے میں کامیاب ہوجاتے ہیں، دوران سروے موٹر برانچ کے اندورنی ذرائع نے بھی اس امر کی تصدیق کی کہ ای ٹی او موٹرز محض رشوت دینے والے چہیتے ایجنٹوں کی فائلیں نمٹا تے ہیں اور عام سائلوں کو خاطر میں نہیں لاتے

مزید : میٹروپولیٹن 1