جاگیردارانہ سسٹم سے نجات کیلئے خلافت راشدہ کا نظام نافذ کرنا ہو گا، مولانا امجد

جاگیردارانہ سسٹم سے نجات کیلئے خلافت راشدہ کا نظام نافذ کرنا ہو گا، مولانا ...

ؒٓؒٓٓلاہور(نمائندہ خصوصی(ؒٓؒٓٓؒٓپو را ملک بد امنی کا شکا ر ہے حا لا ت دن بدن بد تر ہو تے جارہے ہیں امن نام کی کوئی چیز نظر نہیں آرہی ہے حکومت نام کی کوئی شئے نہیں ہے یہ باتیں جے یو آئی کے مر کزی سیکر ٹری اطلا عات مو لا نا محمد امجد خان نے یہاں مختلف وفود سے گفتگو کرتے ہوئے اور جامع مسجدرحمانیہ میں جمعہ کے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کہیں اس موقع پر حافظ اطہر عزیز ،مو لا نا مفتی شمس الحق ،قاری ثناءاللہ ،محمد افضل خان ،قاری امجد سعید ،قاری عبد الوجد ،مو لا نا فصیح الدین سیف ،حافظ محسن امین اور دیگر مو جو د تھے ۔مو لا نا محمد امجد خان نے کہا کہ ملک میں جاگیردارانہ اور سر ما یہ دارانہ نظام مسلط ہے جس وجہ سے عوام کو حقو ق نہیں مل رہے ہیں انہوں نے کہا کہ غریب ایف آئی آر جاگیر دار نواب سر ما یہ دار کی اجازت کے بغیرنہیں کر واسکتاہے انہوںنے کہا کہ خلافت راشدہ کے نظام نافذ ہو جائے تو پھر ہر طبقے کو مکمل حقوق مل جائیں گئے اور سرمایہ دار اور جاگیردار کی چودھراہٹ ختم ہو جائے گی انہوں نے کہا کہ گذشتہ 64سال سے عوام کے حقوق غصب کیئے جارہے ہیں انہوں نے کہا کہ احتساب کا جامع نظام اسلام نے دیا ہے اس نظام میں وقت کے حکمران کو عوام کے سامنے جوابدہ ہو نا ہو گا انہوں نے کہا کہ احتساب کا نظام بھی حلافت راشدہ کے نظام کے نفاذ کے بغیر ممکن نہیں ہے ۔ مو لا نا محمد امجد خان نے کہا کہ اسلام کی روسے صدر ،وزیر اعظم،گونرز،وزرائے اعلی سمیت تمام افسران احتساب سے مستثنی نہیں ہےں انہوں نے کہا کہ ملک میں لارڈ میکالے کے قانون کی مو جود گی عوام مسائل کا شکار ہو تے جارہے ہیں انہوں نے کہا کہ بحرانوں کا جال پھیلتا جارہا ہے انہوں نے کہا کہ بم دھماکے قتل وغارت دہشت گردی حکومت کی ناکامی کو منہ بو لتا ثبوت ہے انہوں نے کہا کہ اسلام کے عادلانہ نظام کے نفاذ کے بغیر ملک میں امن قائم نہیں ہو سکتا ہے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1