قصور میں نابینا امام مسجد کی اہلیہ سے گینگ ریپ لیکن ملزمان نے جاتے جاتے ایسی حرکت کردی کہ زندگی ہی اجیرن ہو گئی

30 جون 2018 (12:25)

قصور (ویب ڈیسک) پتوکی کے نواحی گاﺅں داﺅ کے چک9میں مسجد کے نابینا امام مسجد کی بیوی 6بچوں کی ماں  کو چارافراد نے گینگ ریپ کا نشانہ بناڈالا، ملزمان نے بلیک میل کرنے کیلئے ویڈیو اور تصاویر بھی بنا لیں،پولیس نے مقدمہ درج کرلیا۔

روزنامہ خبریں کے مطابق تھانہ صدر کے علاقے داﺅ کے میں نابینا امام مسجد مولوی عمر کی بیوی اپنی بھتیجی کے گھر جارہی تھی کہ جب وہ دکان کے قریب پہنچی تو مسلح ملزمان عبدالحمید ، محمد صدیق ،شکیل اور اسکے نامعلوم ساتھی نے روک لیا۔مزاحمت اور انکار پر ملزمان نے سنگین نتائج کی دھمکیاں دیں اور کہا کہ وہ تجھے گولی مار کر دفن کر دیں گے، ملزمان خاتون کو اٹھا کر قریبی حویلی میں لے گئے جہاں زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا جبکہ ان کا ایک نامعلوم ساتھی تصویریں اور مووی بناتا رہا۔

ملزمان نے گینگ ریپ کا شکار ہونے والی خاتون کو دھمکی دی کہ اگر شور مچایا یا اگر کسی کو بتایا تو پورے گاﺅں میں تمہاری تصویریں اور موووی دکھا دیں گے تم کہیں بھی منہ دکھانے کے قابل نہ رہو گی اور جب تمہیں ہم بلائیں گے تمہیں آنا پڑے گا، ملزمان نے اگلے روز پھر روکنے کی کوشش کی اس کے انکار پر ملزمان نے پورے گاﺅں میں امام مسجد کی بیوی کی تصویریں اور مووی پوری گاﺅں کو دکھا دی۔

خاتون اپنے ساتھ ہونے والی زیادتی کی داستان لیکر تھانہ صدر پتوکی پہنچ گئی پولیس نے خاتون کی تحریری درخواست پر چاروں ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کر لیا تاہم قصور پولیس نے روایتی بے حسی کا مظاہرہ کیا اور کسی بھی قسم کی گرفتاری عمل میں نہ لائی جاسکی۔نابینا امام مسجد کی بیوی نے چیف جسٹس آف پاکستان سے اپیل کی ہے کہ میرے ساتھ درندگی کا کھیل کھیلنے والے ملزمان کو جلد ازجلد گرفتار کر کے انصاف کے تقاضے پورے کئے جائیں ،درندوں نے میری زندگی برباد کر دی اب وہ مجھے مقدمات کی پیروی سے روکنے کیلئے سنگین نتائج کی دھمکیاں دے رہے ہیں لہذا حکومت مجھے فوری تحفظ فراہم کرے۔

مزیدخبریں