باہر حملہ، اندر کاروبار، سٹاک مارکیٹ میں تاریخی تیزی، انڈیکس میں 2412پوائنٹس کا اضافہ

  باہر حملہ، اندر کاروبار، سٹاک مارکیٹ میں تاریخی تیزی، انڈیکس میں ...

  

کراچی (اکنامک رپورٹر)پاکستان اسٹاک ایکس چینج پر دہشت گرد حملے کے باوجودنہ صرف کاروباری سرگرمیاں معمول کے مطابق جاری رہی بلکہ تیزی کا رجحان بھی غالب رہاجس کے نتیجے میں کے ایس ای100انڈیکس 34ہزار کی نفسیاتی حد بھی بحال ہوگئی اور انڈیکس 2412.31پوائنٹس کے اضافے سے34181.80پوائنٹس کی بلند سطح پر پہنچ گیا جبکہ 54.98فیصد کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس سے مارکیٹ کی سرمایہ کاری مالیت 67ارب94کروڑ79لاکھ روپے بڑھ گئی تاہم کاروباری حجم گزشتہ ٹریڈنگ سیشن کی نسبت20.82فیصد کم رہی۔گزشتہ روزپاکستان اسٹاک مارکیٹ میں ٹریڈنگ کے آغاز سے ہی سرمایہ کاروں کی جانب سے حصص خریداری میں دلچسپی نظر آئی جس کے باعث انڈیکس پہلے نصف گھنٹے میں 34ہزار کی نفسیاتی حد کو عبور کرتے ہوئے34207پوائنٹس کی بلند سطح پر پہنچ گیا اس دوران دہشت گرد حملے کے دوران بھی ٹریڈنگ جاری رہی لیکن کچھ دیر کے لئے منفی رجحان دیکھنے میں آیا جس کے باعث انڈیکس 33720پوائنٹس کی نچلی سطح پر آگیا لیکن حملے کے 20منٹ بعد ہی پھر سے تیزی لوٹ آئی اور 34ہزار کی نفسیاتی حد دوبارہ بحال ہوگئی۔تیزی کا رجحان آخر تک برقرار رہا اورمارکیٹ کے اختتام پرکے ایس ای100انڈیکس242.31پوائنٹس کے اضافے سے34181.80پوائنٹس پر بند ہوا۔اسی طرح کے ایس ای30انڈیکس 72.46پوائنٹس کے اضافے سے 14752.61پوائنٹس اور کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس256.62پوائنٹس کے اضافے سے24510.84پوائنٹس ہوگیا۔گذشتہ روز 351کمپنیوں کے حصص کاروبار ہوا جن میں سے193کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ136میں کمی اور22میں استحکام رہا۔تیزی کے سبب سرمائے کا مجموعی حجم64کھرب22ارب18کروڑ6لاکھ روپے سے بڑھ کر64کھرب90ارب12کروڑ85لاکھ روپے ہو گیا۔پیر کو15کروڑ69لاکھ20ہزار شیئرز کی لین دین ہوئی جو جمعہ کے مقابلے میں 4کروڑ12لاکھ66ہزار شیئرز کم ہے۔قیمتوں میں اتار چڑھاوکے اعتبار سے پاک ٹوبیکوکے حصص کی قیمت67.91روپے کے اضافے سے 1578روپے اورصنوفی ایونٹس کے حصص کی قیمت57.07روپے کے اضافے سے818.07روپے ہو گئی جبکہ 21.62روپے کے کمی سے جوبلی انشورنس کے حصص کی قیمت21.62روپے اورارپاک انٹرنیشنل کے حصص9.65روپے کی کمی سے 119.61روپے پر آ گئی۔نمایاں کاروباری سرگرمیوں کے لحاظ سے پاک ریفائنری،سوئی سدرن گیس، ہیسکول پٹرول،ڈی جی خان سیمنٹ، میپل لیف، ہم نیٹ ورک،پی ایس او،ٹی آر جی پاکستان،پاک الیکٹران اور لوٹی کیمکل کے حصص سرفہرست رہے۔دوسری جانب مقامی صرافہ مارکیٹوں میں پیر کو سونے کی فی تولہ قیمت1600روپے کے اضافے سے ایک لاکھ 4400 روپے کی بلند سطح پر پہنچ گئی۔آل سندھ صراف جیولرز ایسوسی ایشن کے مطابق گزشتہ روز عالمی مارکیٹ میں فی اونس سونے کی قیمت10ڈالر کے اضافے سے1772ڈالرہوگئی جس کے زیر اثر ملکی صرافہ مارکیٹوں میں ایک تولہ سونے کی قیمت 1600روپے کے اضافے سے ایک لاکھ4400روپے اور دس گرام سونے کی قیمت1372روپے کے اضافے سے 89ہزار506روپے ہوگئی جب کہ چاندی کی فی تولہ قیمت 1050روپے بھی بغیر کسی تبدیلی کے برقرار رہی۔ادھرانٹر بینک میں امریکی ڈالر مزید50پیسے کے اضافے سے168.40روپے کی بلند سطح پر پہنچ گیا جب کہ اوپن مارکیٹ ڈالر کی قدر مستحکم رہی۔فاریکس ایسوسی ایشن آف پاکستان کے مطابق پیر کو انٹر بینک میں روپے کے مقابلے ڈالر کی قیمت خرید 50 پیسے کے اضافے سے167.60روپے سے بڑھ کر168.10روپے اور قیمت فروخت167.90روپے سے بڑھ کر 168.40 روپے ہو گئی جب کہ اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت خرید167.30روپے اور قیمت فروخت167.80روپے مستحکم رہی۔دیگر کرنسیوں میں یورو کی قیمت خرید184.80روپے سے بڑھ کر186روپے اور قیمت فروخت186.80روپے سے بڑھ کر 188 روپے ہوگئی جب کہ برطانوی پاونڈ کی قیمت خرید 204.50روپے سے بڑھ کر205روپے اور قیمت فروخت206.50روپے سے بڑھ کر207روپے ہوگئی۔سعودی ریال کی قیمت خرید 43.90روپے سے بڑھ کر44روپے اور قیمت فروخت 44.40روپے سے بڑھ کر44.50روپے ہوگئی جب کہ یواے ای درہم کی قیمت خرید 44.90روپے سے بڑھ کر45روپے اور قیمت فروخت 45.40 روپے سے بڑھ کر45.50روپے ہوگئی۔

سٹاک مارکیٹ

مزید :

صفحہ اول -