اپوزیشن نے بجٹ پڑھا نہیں، پٹرول کی قیمت عالمی مارکیٹ نے بڑھائی: حماد اظہر

اپوزیشن نے بجٹ پڑھا نہیں، پٹرول کی قیمت عالمی مارکیٹ نے بڑھائی: حماد اظہر

  

اسلام آباد (این این آئی) وفاقی وزیر حماد اظہر نے کہا ہے کہ دنیا میں آئل مہنگا تھا ہم نے قیمت نہیں بڑھائی، تیل کی قیمت بڑھنے پر ٹیکس نہیں لگایا،پاکستان میں شوگر پالیسی پر نظرثانی ہونی چاہئے،ایوان کو متفقہ طور پر فیصلہ کرنا چاہئے،زراعت کا شعبہ ٹھیک نہیں ہو گا تو ملک ترقی نہیں کر سکتا،موبائل مینوفیکچرنگ پالیسی لا رہے ہیں،1600 آئٹمز پر امپورٹ ڈیوٹیز ختم کر رہے ہیں،کبھی ٹیکس فری بجٹ نہیں آیا،توقع تھی اپوزیشن پوائنٹ سکورنگ نہیں کریگی۔ پیر کو قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے وفاقی وزیر حماد اظہر نے کہاکہ فنانس بل پر ترامیم اور بل منظوری کیلئے موجود ہیں،سخت حالات میں بھی بیٹھے ہیں۔اپوزیشن ذاتی حملے کر رہے ہیں،یہ انکی سنجیدگی ہے۔ اپویشن کی طرف سے لطیفے سننے کو ملے۔ انہوں نے کہاکہ حکومت نے دنیا میں مہنگا تیل تھا ہم نے قیمت کم کی،تیل کی قیمت بڑھنے پر ٹیکس نہیں لگایا،حکومت نے نہیں عالمی منڈی نے قیمتیں بڑھائی۔ نون لیگ کے دور میں ایک ماہ میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں 35 روپے اضافہ ہوا تھا۔انہوں نے کہاکہ الیکٹرک وہیکل پالیسی پر ترامیم آئی ہیں،موبائل مینوفیکچرنگ پالیسی لا رہے ہیں۔کبھی ٹیکس فری بجٹ نہیں آیا،شاید ایسا بجٹ کبھی آیا ہو جو اب کی بار آیا ہے۔ہم تو مافیا کے خلاف الیکشن سے قبل ہی جیت گئے تھے،دو سیاسی مافیا کو باہر کرکے نوجوانوں کو آگے لایا گیا۔ 30 لاکھ کاروباروں کے تین ماہ کے بجلی کے بل ادا کیے گئے۔پی ایس ڈی پی کی بڑی ایلوکیشن صوبہ بلوچستان اور صوبہ سندھ کے لئے رکھی۔سب سے زیادہ بجٹ بلوچستان اور سندھ کو دیا گیا۔بجٹ نہ پڑھنے والوں نے شور مچایا۔ا حتساب ان کے اعصاب پر سوار ہے،ہمیں توقع تھی اپوزیشن پوائنٹ سکورنگ نہیں کرے گی۔

مزید :

صفحہ آخر -