گندم کی طلب اور رسدمیں توازن کیلئے صوبوں کو پالیسی تشکیل دینے کی ہدایت

گندم کی طلب اور رسدمیں توازن کیلئے صوبوں کو پالیسی تشکیل دینے کی ہدایت

  

اسلام آباد(این این آئی)وفاقی اور صوبائی خوراک کے محکموں نے فیصلہ کیا ہے کہ گندم کی طلب اور رسد میں توازن قائم رکھنے کیلئے صوبے جلد گندم کے اجراء کی پالیسی تشکیل دیں گے۔ یہ فیصلہ پیر کو وزارت قومی غذائی تحفظ و تحقیق کے صوبائی خوراک کے محکموں کے ساتھ اجلاس کے دوران کیا گیا۔ اجلاس کی صدارت سیکرٹری قومی غذائی تحفظ عمر حمید خان نے کی۔ ای سی سی اجلاس کے فیصلے کے مطابق صوبے گندم فراہمی کی پالیسی کو فوری طور پر بنائیں گے۔ اس موقع پر محکمہ خوراک پنجاب نے بتایا کہ پنجاب منگل تک اپنی گندم کے اجراء کی پالیسی تشکیل دے گا جبکہ محکمہ خوراک سندھ آئندہ دس دن میں اپنی گندم جاری کرنے کی پالیسی بنائے گا۔ اجلاس میں نجی سیکٹر کے ذریعہ ملک میں گندم کی درآمد پر بھی محصولات اور ٹیکسوں کے خاتمہ پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ای سی سی کے فیصلے کے مطابق پاسکو اور کے پی حکومت نے 23 جون کو پاسکو سے خیبرپختونخوا کو ایک لاکھ ٹن گندم جاری کرنے کیلئے ایم او یو پر دستخط کئے ہیں۔گندم کی درآمد سے متعلق مانیٹرنگ کمیٹی نے اب تک 70 درآمد کنندگان کو ملک میں 355950 ٹن گندم درآمد کرنے کیلئے درآمدی پرمٹ جاری کئے ہیں۔ توقع کی جا رہی ہے کہ حکومت کی جانب سے فوری طور پر اٹھائے گئے اقدامات سے نہ صرف ملک میں گندم کی طلب اور رسد توازن آئے گا قیمتیں مستحکم کرنے سمیت گندم کی اسمگلنگ کی حوصلہ شکنی ہوگی۔

گندم پالیسی

مزید :

صفحہ آخر -