پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کیخلاف احتجاجی مظاہرے

پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کیخلاف احتجاجی مظاہرے

  

ملتان، وہاڑی(سٹی رپورٹر، بیورورپورٹ، نامہ نگار)جماعت اسلامی لیبر ونگ کے صدر حافظ عبدالرحمن نے کہا کہ آج حکمران آئی ایم ایف کے سامنے بے بس ہیں اس لئے ان سے نجات حاصل کرنا ضروری ہے ورنہ مزید مہنگائی بڑھتی جائے گی ان خیالات کا اظہار انہوں نے جماعت اسلامی لیبر ونگ ملتان،نیشنل لیبر فیڈریشن ملتان کے زیراہتمام وہاڑی چوک ملتان میں پیٹرول،ڈیزل اور ضروری اشیاء کی قیمتوں میں اضافہ کے خلاف حکومت کا اعلامتی جنازہ روڑ پر رکھ(بقیہ نمبر46صفحہ6پر)

کر احتجاجی مظاہرے کے شرکاء سے صدارتی خطاب کرتے ہوئے کیا مظاہرین نے کتبے اٹھا کر مہنگائی کے خلاف فلک شگاف نعرے لگائے مظاہرے میں چوہدری عبدالغنی،رانا محمد عمرکے علاوہ لوگوں کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔ ادھرحکومت کی جانب سے بجٹ میں سرکاری ملازمین کو نظر انداز کرنے اور پٹرولیم مصنوعات میں ریکارڈ اضافہ کے خلاف آل پاکستان کلرکس ایسوسی ایشن(ایپکا)ملازمین نے قلم چھوڑ ہڑتال کا اعلان کردیا ملازمین پریس کلب کے سامنے احتجاج بھی کریں گے ضلعی صدر ایپکا محمد طیب بھٹی نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ حکومت نے بجٹ میں ملازمین کو یکسر طور پر نظر انداز کیا ہے جس کی پرزور مذمت کرتے ہوئے آج تمام محکموں کے ملازمین کام چھوڑ کر پریس کلب کے سامنے احتجاج کریں گے انہوں نے کہا کہ حکومت ملازمین کے ساتھ امتیازی سلوک کررہی ہے سیکرٹریٹ ملازمین کو مراعات دی جارہی ہیں جبکہ دیگر ملازمین کو بنیادی سہولیات بھی میسر نہیں ہیں حکومت نے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں بڑھا کر عوام پر اضافی بوجھ ڈال دیا ہے حکومتی ناقص پالیسیوں کے خلاف ایپکا ملازمین قلم چھوڑ ہڑتال کرتے ہوئے بھرپور احتجاج ریکارڈ کروائیں گے اس موقع پر جنرل سیکرٹری ملک شہباز ریاض کھوکھر,رہنما شیخ مظہر,رانا ناصر محمود سمیت دیگر بھی موجود تھے۔ جبکہ پٹرولیم مصنوعات میں اضافہ پر پاکستان کسان اتحاد، اتفاق رکشہ یونین اور مرکزی انجمن تاجران کے زیر اہتمام حکومت کے خلاف الگ الگ احتجاجی مظاہرے تفصیل کے مطابق صدرمرکزی انجمن تاجران صدرارشادحسین بھٹی،جنرل سیکرٹری راؤخلیل احمد,سرپرست اعلیٰ اتفاق رکشہ یونین شیخ جاویدکالا،چئیرمین چوہدری شفیق،صدرمیاں منیربھلر،جنرل سیکرٹری چوہدری شبیر،میاں ساجد آصف کی قیادت میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں اچانک میں اضافہ پرمرکزی انجمن تاجران،اتفاق رکشہ یونین اور شہریوں نے حکومت کے خلاف اٹھک بیٹھک کرکے اورکان پکڑکرانوکھااحتجاجی مظاہرہ کیا۔مظاہرین نے حکومت کے خلاف شدیدنعرہ بازی کی جبکہ حکومت سے مستعفی ہونے کامطالبہ بھی کیا۔تفصیل کے مطابق پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ کے خلاف مرکزی انجمن تاجران،اتفاق رکشہ یونین اورشہریوں نے حکومت کے خلاف انوکھا احتجاجی مظاہرہ کیا۔مظاہرین نے اٹھک بیٹھک کرکے اورکان پکڑکراحتجاج کیا۔اس موقع پرمقررین نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ وزیراعظم عمران خان نے اقتدارمیں آنے سے پہلے دعوے کئے تھے کہ ہم اقتدارمیں آکربیروزگاروں کوروزگارفراہم کریں گے لیکن اب سب کچھ الٹ ہورہاہے روزگادیناتودورکی بات اب توروزگارچھیناجارہاہے حکومتی وزراء مکمل طورپرناکام ہوچکے ہیں وزیراعظم اپنے وعدوں کوپوراکرتے ہوئے نااہل وزرائکوفی الفورتبدیل کریں اگروزیراعظم اپنے وزیروں کے سامنے بے بس ہیں تواقتدارسے علیحدہ ہوجائیں ان کاکہناتھاکہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں ہوشربااضافہ کے ساتھ پی تمام اشیاء ضروریہ کی قیمتوں کوبھی پرلگ گئے ہیں اورقیمتیں کسی کے کنٹرول میں نہیں رہیں حکومت اقتدارمیں آنے کے بعدمسلسل جھوٹ بول رہی ہے اورعوام کاخون چوس رہی ہے حکومت کی ناقص پالیسیوں کی وجہ سے ملک وقوم کوشدیدمشکلات کاسامناہے۔پہلے اشیاء خوردونوش اور اب پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں بڑھاکرغریب عوام کو خودکشیاں کرنے پرمجبور کیاجارہاہے۔پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ فوری واپس لیاجائے ورنہ عوام سڑکوں پر نکلیں گے اس موقع مظاہرین نے حکومت کے خلاف شدید نعرہ بازی بھی کی دریں اثناء پاکستان کسان اتحاد کے زیر اہتمام کسانوں نیبھینس کے آگے بین بجاکر احتجاجی مظاہرہ کیا، مظاہرین کاکہناتھا کہ موجودہ حکومت کی مثال بھینس کی ہے جسکے آگے جو مرضی بین بجالیں انہیں کوئی پرواہ نہیں ہے لیکن اگر اب فل الفور نوٹس لیتے ہوئے پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں کمی نہ کی گئی تو احتجاج کا دائرہ کار وسیع کرتے ہوئے صوبہ کی سطح پر احتجاج کریں گے۔

قیمت

مزید :

ملتان صفحہ آخر -