ریلوے لائن کے بعداینٹیں بھی چوری‘ تحقیقات شروع

ریلوے لائن کے بعداینٹیں بھی چوری‘ تحقیقات شروع

  

ملتان(نمائندہ خصوصی)چناب ویسٹ بینک ریلوے اسٹیشن سے لاکھوں روپے مالیت کی ریلوے لائنیں چوری کے بعداسٹیشن باؤنڈری اوردیگر عمارتوں کی لاکھوں روپے مالیت کی اینٹیں چوری ہونے کی تحقیقات بھی شروع کردی گئی ہے۔ ریلوے پولیس نے ریلوے لائنوں کی چوری کے معاملہ میں گینگ نمبر1کے دوپٹرولرزکوشامل تفتیش کرلیاہے۔جبکہ کانٹے (بقیہ نمبر24صفحہ6پر)

والے کوشامل تفتیش کرنے کے لئے ڈی ٹی اوریلوے کوخط لکھ دیاہے تاکہ اس سے سپئیرکرکے پولیس کے حوالے کیا جائے۔ بتایاجاتاہے کہ گرفتارملزمان نے بیان دیاہے کہ انہوں نے کانٹے والے سے ریلوے لائنیں خریدی تھیں جس کیلئے ایک دفعہ20ہزاراوردوسری دفعہ15ہزارروپے کی ادائیگی کی گئی۔ملزمان کے بیان کی روشنی میں کانٹے والے کوشامل تفتیش کرنے کافیصلہ کیاگیاہے۔دوسری طرف پٹرولرزنے چوری کی واردات سے لاعلمی کااظہارکیاہے۔ان کا کہناہے کہ ان کی ڈیوٹی ٹریک سیفٹی کے حوالے سے ہے نہ کہ چوکیداراگروہ ٹریک پٹرونگ چھوڑ کر ریلوے عمارت ومیٹریل کی چوکیداری نہیں کرسکتے اس صورت ٹرین حادثہ ہوجائے توکون ذمہ داری لے گا۔مزیدبراں پولیس تفتیش میں چناب ویسٹ بینک اسٹیشن کی چاردیواری کی اینٹیں،دیگرعمارتوں کی اینٹیں اورکھڑکیاں دروازے اورریلوے اراضی سے مٹی بھی چوری ہونے کا انکشاف ہواہے۔جس پرگزشتہ روزریلوے ڈاک بنگلہ کے چوکیدار کوبلا کربھی ریلوے پولیس حکام نے بازپرس کی ہے۔ بتایاجاتاہے کہ اینٹیں اسسٹنٹ انسپکٹر آف ورکس نے اٹھوائی تھیں۔پولیس تفتیش کررہی ہے کہ چار دیواری کی مرمت کرنے کی بجائے اس کی اینٹیں کس مقصدکے لئے اٹھوائی گئیں۔

تحقیقات

مزید :

ملتان صفحہ آخر -