خیبر پختونخوا کی پولیس روایات کی امین ہے، ڈاکٹر ثناء اللہ عباسی

خیبر پختونخوا کی پولیس روایات کی امین ہے، ڈاکٹر ثناء اللہ عباسی

  

مردان (بیورورپورٹ)انسپکٹر جنرل آف پولیس ڈاکٹر ثناء اللہ عباسی نے کہاہے کہ خیبر پختونخوا پولیس روایات کی امین ہے اور صوبے کے ہر فرد کے عزت نفس اور بنیادی انسانی حقوق کا ہر صورت میں خیال رکھا جائیگا،لاک ڈاؤن کو موثر بنانے اور فرائض کی انجام دہی کے دوران کورونا وباء سے 116سے زائد پولیس افسران و جوان متاثر جبکہ 6پولیس افسران شہید ہو چکے ہیں،ضم اضلاع میں بہترین پولیسنگ نظام کا اجراء کیاگیاہے اور 28نئے تھانے اور پولیس لائنز پر کام امسال شروع کیا جائیگاوہ پیر کے روز عبدالولی خان یونیورسٹی مردان کے دورے کے موقع پر ”ضم شدہ اضلاع میں پولیسنگ اورکورونا وباء میں پولیس کے کردار“کے موضوع پر خصوصی لیکچر دے رہے تھے یونیورسٹی پہنچنے پر وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر ظہور الحق، ڈی آئی جی شیر اکبر، ڈی پی او ڈاکٹر زاہد اللہ اور یونیورسٹی فیکلٹی ممبران نے آئی جی پولیس کا پرتپاک استقبال کیاآن لائن لیکچر میں یونیورسٹی کے مختلف ڈیپارٹمنٹس جن میں پولیٹیکل سائنس، جرنلزم، آئی آر، ہسٹری، اسلامیات اور سوشل سائنسز کے پروفیسرز، سکالرز اور طلباء نے شرکت کی آئی جی پولیس نے آن لائن لیکچر دیتے ہوئے کہا کہ ضم شدہ اضلاع میں بہترین پولیسنگ کا آغاز کر دیا گیا ہے۔لیویز اور خاصہ داروں کو پولیس فورس میں ضم کر کے انکی باقاعدہ تربیت کا پروگرام بھی وضع کیا گیا ہے۔29ہزار لیویز اور خاصہ دار فورس کو ضم کرنے کا عمل 90فیصد مکمل ہوچکا ہے۔ دو ہزار سے زائد آسامیوں پر میرٹ کے تحت بھرتی کا عمل جلد شروع کیا جائیگا۔نئے ضم شدہ اضلاع میں 28نئے تھانے اور پولیس لائنز پر کام امسال شروع کیا جائیگا۔قبائلی عوام نے نئے ضم شدہ اضلاع میں پولیس کو خوش آمدید کہا جہاں پر پولیس نے ٹریفک کا نظام متعارف کرایا،ای چالان سسٹم سمیت کمپیوٹرائزڈ ڈرائیونگ لائسنس اور کریکٹر ویری فیکیشن کے عمل کا اجراء کر دیا گیا ہے جس سے نوجوانوں کو بیرونی ملک ملازمت کے حصول میں آسانیاں پیدا ہوگئی ہیں۔ آئی جی پی نے شرکاء کو بتایا کہ خیبر پختونخوا پولیس میں تشدد کی کوء گنجائش نہیں ہے خیبر پختونخوا پولیس روایات کی امین ہے اور صوبے کے ہر فرد کے عزت نفس اور بنیادی انسانی حقوق کا ہر صورت میں خیال رکھا جائیگاکرونا وباء کے حوالے سے آئی جی پی کا کہنا تھا کہ وباء کی روک تھام میں خیبر پختونخوا پولیس کا کردار مثالی رہا، لاک ڈاؤن کو یقینی بنانے کے ساتھ ساتھ شہریوں کی تربیت کا عمل بھی جاری ہے۔وباء کے دوران 116سے زائد پولیس افسران و جوان کرونا کا شکار ہوئے جن میں اب تک 06پولیس افسران شہید ہو چکے ہیں۔سمینار کے اختتام پر آئی جی پولیس ڈاکٹر ثناء اللہ عباسی کو یونیورسٹی انتظامیہ کی جانب سے یادگاری شیلڈ پیش کیا گیا۔ بعد ازاں انہوں نے یونیورسٹی کے ڈیجیٹل لائبریری کادورہ کیا اور یونیورسٹی گارڈن میں پودا بھی لگایا۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -