دہشتگردوں کے زیر استعمال گاڑی ٹویوٹا سیلون، رجسٹریشن نمبر بی اے پی 629،نمبر پلیٹ جعلی نکلی

دہشتگردوں کے زیر استعمال گاڑی ٹویوٹا سیلون، رجسٹریشن نمبر بی اے پی 629،نمبر ...

  

کراچی (این این آئی) پاکستان اسٹاک ایکسچینج پر حملے میں ملوث دہشت گردوں کے زیر استعمال گاڑی کا ڈیٹا حاصل کرلیا گیا ہے۔تفصیلات کے مطابق پاکستان اسٹاک ایکسچینج پر 4 دہشت گردوں نے حملہ کیا جو کہ ایک گاڑی میں سوار ہوکر اسٹاک ایکسچینج پہنچے تھے، مذکورہ گاڑی ٹویوٹا سیلون ہے جس کا رجسٹریشن نمبر بی اے پی 629 ہے، حملہ آوروں کے زیر استعمال گاڑی ایک نجی بینک کے نام پر 30 نومبر 2013 کو رجسٹرڈ کرائی گئی۔دہشت گردوں کے زیر استعمال گاڑی 2013 کے ماڈل کی ہے، گاڑی کا ٹیکس رواں برس یعنی 30 جون 2020 تک ادا کیا جاچکا ہے، گاڑی کا انجن نمبر وائی 849018 ہے، حاصل کردہ ڈیٹا میں سی پی ایل سی کے ریکارڈ میں گاڑی کسی بھی کرائم میں نظر نہیں آرہی اور بالکل کلیئر ہے جس کا واضح مطلب ہے کہ گاڑی پہلی مرتبہ ہی ایسے کسی دہشت گرد حملے میں استعمال کی گئی ہے۔پاکستان اسٹاک ایکسچینج پر پیرکی صبح بھاری اسلحے کے ساتھ حملہ کرنے والے دہشت گردوں کے زیر استعمال رہنے والی گاڑی کی نمبر پلیٹ جعلی نکلی ہے۔تفتیشی ذرائع نے بتایا کہ حملہ آوروں کے زیر استعمال گاڑی پر لگی نمبر پلیٹ جعلی ہے، گاڑی کی نمبر پلیٹ اور انجن نمبر الگ الگ ہیں، گاڑی کو انجن نمبر سے ٹریس کیا جا رہا ہے۔ذرائع نے یہ انکشاف بھی کیاکہ دہشت گردوں کے زیر استعمال گاڑی ایک نجی بینک کے نام پر رجسٹرڈ ہے۔واضح رہے کہ پیر کی صبح 10 بج کر 5 منٹ پر کراچی میں پاکستان اسٹاک ایکسچینج پر 4 دہشت گردوں نے بڑی تعداد میں اسلحے کے ساتھ حملہ کیا، مرکزی گیٹ پر بم پھینکنے کے بعد انھوں نے اندھا دھند فائرنگ شروع کی، تاہم عمارت میں تعینات سیکورٹی گارڈز اور پولیس اہل کاروں نے انھیں روکتے ہوئے حملہ ناکام بنا دیا۔واقعے میں سب انسپکٹر شاہد اور 4 سیکورٹی گارڈز سمیت 6 افراد شہید ہو گئے جب کہ 3 اہل کار زخمی ہوئے، اور چاروں حملہ آور دہشت گردوں کو مار گرایا گیا۔

دہشتگرد گاڑی

مزید :

صفحہ اول -