"شکریہ جنرل قمر جاوید باجوہ۔۔۔"

"شکریہ جنرل قمر جاوید باجوہ۔۔۔"

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)صوابی سے تعلق رکھنے والی میجرجنرل ڈاکٹر نگارجوہرکو لیفٹیننٹ جنرل کے عہدے پرترقی دیدی گئی جس کے بعد وہ لیفٹیننٹ جنرل کے عہدے پرترقی پانےوالی پاک فوج کی پہلی خاتون افسربن گئی ہیں،لیفٹیننٹ جنرل ڈاکٹر نگار جوہر کی اس ترقی پر ہر کوئی انہیں سوشل میڈیا پر مبارکباد دیتا ہوادکھائی دے رہا ہے،معروف تجزیہ کار اور سینئر صحافی کامران خان بھی پاک فوج میں آنے والی اس حیران کن تبدیلی پر انتہائی خوش ہوئے ہیں اور انہوں نے لیفٹیننٹ جنرل ڈاکٹر نگار جوہر کو پاکستانی خواتین کی رول ماڈل قرار دیتے ہوئےپاک فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ کا شکریہ ادا کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ پر ٹویٹ کرتے ہوئےنجی ٹی وی کے معروف اینکر پرسن کامران خان نے کہا کہ " کیا بات ہے، ضلع صوابی کے پنج پیر کی خاتون ایک ماہر ڈاکٹر آج سے پاکستان آرمی کی پہلی خاتون لیفٹیننٹ جنرل، پہلی خاتون سرجن جنرل محترمہ جنرل نگار جوہر تمام پاکستانی خواتین کی رول ماڈل بنیں گی اور انکی ترقی دنیا کو ترقی پسند پاکستان کی طرف متوجہ کرے گی ۔کامران خان نے پاک فوج میں کسی بھی خاتون افسر کو ملکی تاریخ میں پہلی بار  لیفٹیننٹ جنرل کے عہدے پر ترقی دینے پر پاک فوج کے سربراہ کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ "شکریہ جنرل قمر جاوید باجوہ"۔

یاد رہے کہ 

پاک فوج کے تعلقات عامہ کے شعبے آئی ایس پی آر کے مطابق میجرجنرل نگارجوہرکو لیفٹیننٹ جنرل کے عہدے پرترقی دیدی گئی ،نگارجوہر لیفٹیننٹ جنرل کے عہدے پرترقی پانےوالی پہلی خاتون افسر ہیں۔لیفٹیننٹ جنرل نگارجوہرپاک آرمی کی پہلی خاتون سرجن جنرل ہیں ،لیفٹیننٹ جنرل نگارجوہرکاتعلق پنج پیرضلع صوابی سے ہے اور اس وقت وہ  سی ایم ایچ راولپنڈی میں تعینات ہیں۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -