"" کیا دن تھے، نورا کشتی جاری تھی، قوم کا پیسہ تھا، آپکے کیمپ آفس تھے، بیٹے تو بیٹے داماد بھی ٹکر کے کرپٹ ڈھونڈے۔۔۔"" ڈاکٹر شہباز گل نے شہباز شریف کو آڑے ہاتھوں لے لیا

"" کیا دن تھے، نورا کشتی جاری تھی، قوم کا پیسہ تھا، آپکے کیمپ آفس تھے، بیٹے تو ...

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیر اعظم عمران خان کے معاون خصوصی ڈاکٹر شہباز گل  نے اپوزیشن لیڈر میاں شہباز شریف اور سابق وزیر اطلاعات سینیٹر پرویز رشید کو کھری کھری سناتے ہوئے ایسی باتیں کہہ دی ہیں کہ مسلم لیگ ن  کے متوالوں اور پی ٹی آئی کے کھلاڑیوں کے درمیان سوشل میڈیا پر نئی جنگ چھڑ جائے گی۔

تفصیلات کے مطابق سوشل میڈیا پر اپوزیشن کے الزامات کا جواب دینے کے حوالے سے شہرت پانے والے وزیر اعظم کے معاون خصوصی ڈاکٹر شہباز گل نے قائد حزب اختلاف شہباز شریف کے ٹویٹ جس میں انہوں نے وزیر اعظم عمران خان کو تنقید کا نشانہ بنایا تھا کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ " کیا دن تھے، نورا کشتی جاری تھی، قوم کا پیسہ تھا، آپکے کیمپ آفس تھے، بیٹے تو بیٹے داماد بھی ٹکر کے کرپٹ ڈھونڈے، تایا سبسڈی دیتا بھتیجے کو، ذاتی گھروں کی دیواروں پر غریب قوم کے کروڑوں خرچ، لوٹ مار پاکستان میں، جائیدادیں لندن میں، اربوں جعلی اکاؤنٹس میں۔

اپنے ایک دوسرے ٹویٹ میں ڈاکٹر شہباز گل نے ن لیگی رہنما سینیٹر پرویز رشید کے ٹویٹ کا جواب دیتے ہوئے کہا کہ ""پرویز صاحب اپنی عمر اور سفید بالوں کی ہی کچھ لاج رکھ لیں، جان اللّٰہ کو دینی ہےسرٹیفائیڈ کرپٹ اور بددیانت نواز شریف کو نہیں۔ ن لیگ کے آخری سال میں یہ فگر 15.8 کھرب روپے تھی جو 98٪ کمی کے ساتھ 270 ارب روپے پر آ چکی ہے، سب کچھ یہیں رہ جانا ہے بات تو حق کی کریں۔یاد رہے کہ سابق وزیر اطلاعات پرویز رشید نے مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ  پر آڈیٹر جنرل کی رپورٹپر تبصرہ کرتے ہوئےکہا تھا کہ"عمران حکومت کے اپنے آڈیٹر جنرل کے مطابق عوامی خزانے کا 270 ارب روپیہ ایک سال میں لوٹ کھایا گیا،یعنی “صادق و امین “ کی حکومت تقریباً ایک ارب روپیہ ہر روز خود ڈکار جاتی ہے،اس کو کہتے ہیں”وچوں وچ کھائی جا تے اوتوں رولا پائی جا“۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -