روپے کی بے قدری، ودہولڈنگ ٹیکس‘دیگر مسائل فورا حل کیے جائیں: لاہور چیمبر

روپے کی بے قدری، ودہولڈنگ ٹیکس‘دیگر مسائل فورا حل کیے جائیں: لاہور چیمبر

لاہور(کامرس رپورٹر) لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری نے حکومت پر زور دیا ہے کہ معاشی معاملات میں توازن لانے کے لیے روپے کی بے قدری اور بینکوں سے لین دین پر ودہولڈنگ ٹیکس سمیت وہ تمام مسائل فورا حل کرے جو کاروباری سرگرمیوں کی راہ میں رکاوٹ ہیں۔ ایک بیان میں لاہور چیمبر کے صدر ملک طاہر جاوید، سینئر نائب صدر خواجہ خاور رشید اور نائب صدر ذیشان خلیل نے کہا کہ معاشی اشاریے اچھے حالات کی نشاندہی نہیں کررہے، روپے کی قدر میں اچانک اتار چڑھاؤ نے بیرونی قرضوں کے بوجھ میں اضافے، درآمدی خام مال کی قیمتوں اور تجارتی خسارے میں اضافے جیسے مسائل کو جنم دیا ہے، روپے کی بے قدری سے برآمدات کو بھی فائدہ ہونے کے امکانات نہیں کیونکہ اکثر برآمدی صنعتیں کئی ضروری خام مال درآمد کرتی ہیں۔ اس کے علاوہ پٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں بڑھنے سے بھی صنعتی و تجارتی مال کی نقل و حمل کی لاگت بڑھ گئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ تمام پہلوؤں پر مدنظر رکھتے ہوئے ہوئے روپے کی قدر مستحکم کرنا ہوگی تاکہ تمام شعبہ ہائے زندگی مضر اثرات سے محفوظ رہیں۔ لاہور چیمبر کے عہدیداروں نے ایک مرتبہ پھر بینکوں سے لین دین پر ودہولڈنگ ٹیکس کو فتنہ قرار دیتے ہوئے یہ ظالمانہ ٹیکس فورا واپس لینے کا مطالبہ کیا۔ انہوں کہا کہ غیرمنصفانہ ودہولڈنگ ٹیکس کاروباری برادری پر بہت بڑا بوجھ ہے ، کاروباری حالات پہلے ہی چیلنجز سے دوچارہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ودہولڈنگ ٹیکس پر حکومت کو کاروباری برادری کے حق میں فیصلہ کرنا ہوگاکیونکہ اس کی وجہ سے کاروباری ماحول خراب ہوتا جارہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ معاشی استحکام کا حصول ہمارا خواب ہے مگر روپے کی بے قدری، ودہولڈنگ ٹیکس ، دوہرے ٹیکسوں، پیچیدہ نظام ، زیادہ پیداواری لاگت اور ریفنڈز میں تاخیر جیسے مسائل کی موجودگی میں یہ پورا ہوپانا ناممکن ہے۔

انہوں نے کہا کہ کاروباری برادری نے روز اوّل سے ہی ودہولڈنگ ٹیکس مسترد کردیا تھا مگر متعلقہ حکام زمینی حقائق کا ادراک کرنے کو تیار نہیں اور یہ ٹیکس جبری طور پر عائد کررکھا ہے۔

لاہور چیمبر کے عہدیداروں نے حکومت پر زور دیا کہ وہ یہ مسائل فورا حل کرے تاکہ تاجر برادری حقیقی معنوں میں فورس کا کردار ادا کرسکے۔

مزید : کامرس