غیر تدریسی ڈیوٹیوں سے تعلیمی نظام تباہی کے دہانے پر پہنچ چکا : چودھری سرفراز

غیر تدریسی ڈیوٹیوں سے تعلیمی نظام تباہی کے دہانے پر پہنچ چکا : چودھری سرفراز

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر)ایجوکیشن رپورٹر)پنجاب ٹیچرز یونین کے مرکزی صدر چوہدری محمد سرفراز، سید سجاد اکبر کاظمی، رانا لیاقت علی، جام صادق، رانا انوار،راناالطاف حسین، ساجد محمود چشتی، عبدالقیوم راہی ، سعید نامدار، افضل کیانی، رحمت اللہ قریشی، شیخ اختر، عبد الطارق نیازی،رانا طارق، راؤ عابد، راؤ شمشاد، نجم النساء، صفدر کالرو، ، منیر انجم ، امتیاز طاہر و دیگر نے کہا ہے کہ غیر تدریسی ڈیوٹیوں سے تعلیمی نظام تباہی کے دہانے پر پہنچ چکا ہے۔دسمبر ، جنوری میں اساتذہ کو ووٹوں کی درستگی ، فروری میں پنجم اور ہشتم کی امتحانی ڈیوٹیاں ، پیپر مارکنگ اور رزلٹ کی تیاری، مارچ میں میٹرک کے امتحانات کی ڈیوٹیاں و مارکنگ،یوپی سروے کی ذمہ داری اب اپریل میں پریکٹیکل اور ووٹوں کے اندراج کے لئے ڈسپلے سنٹروں پر اساتذہ کی ڈیوٹیوں نے تدریسی نظام اور داخلہ مہم کو بُری طرح متاثر کیا ہے اور آئندہ مئی میں پھر اساتذہ کو امتحانی ڈیوٹیوں پر لگایا جا رہا ہے۔ اگر چھ ماہ تک بچوں کو 100% اساتذہ میسر نہیں ہونگے تو رزلٹ کس طرح بہتر آ سکتا ہے۔غیر تدریسی ڈیوٹیوں کی انجام دہی کے لئے تو حاضری سے استثنی دے دیا جاتا ہے لیکن بیماری ، ضروری کام، شادی یا عمرہ کیلئے رخصت پر پابندی عائد کر دی جاتی ہے۔غیر تدریسی ڈیوٹیوں نے اساتذہ کے تقدس کو بُری طرح پامال کر رکھا ہے۔ لیکن بدقسمتی سے سپریم کورٹ آف پاکستان کی ہدایت کے باوجود کہ اساتذہ کو غیر تدریسی ڈیوٹیاں نہ دی جائیں پاکستان میں اساتذہ کو غیر تدریسی ڈیوٹیوں پر لگایا جا رہا ہے اور جان بوجھ کر تعلیمی نظام کو تباہ کیا جا رہا ہے۔

تاکہ غیر حقیقی تعلیمی اہداف کی ناکامی کا ملبہ اساتذہ پر ڈالا جا سکے اور پھر انہیں سخت سزائیں دے کر ان کا معاشی و معاشرتی استحصال کیا جاسکے۔لہذا وزیر اعلی پنجاب، وزیر تعلیم پنجاب اور سکرٹری سکولز پنجاب اساتذہ کی غیر تدریسی ڈیوٹیوں کا خاتمہ یقینی بنائیں تاکہ اساتذہ اپنے تدریسی فرائض پور ی توجہ اور لگن سے ادا کرکے بہتر نتائج دے سکیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 4

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...