سانحہ بلدیہ کیس کی سماعت پر دو مزید ڈاکٹروں نے بیان قلمبند کر ادیا

سانحہ بلدیہ کیس کی سماعت پر دو مزید ڈاکٹروں نے بیان قلمبند کر ادیا

کراچی(اسٹاف رپورٹر)انسدادہ دہشت گردی کی خصوصی عدالت میں سانحہ بلدیہ کیس کی سماعت پر دو مزید ڈاکٹروں نے بیان قلمبند کر ادیا ۔ عدالت نے آئندہ سماعت پر مزید ڈاکٹرز کو طلب کرتے ہوئے مزید کارروائی 5 اپریل تک ملتوی کر دی ۔ عدالت نے مقدمے میں نامزد ایم کیو ایم رہنما رؤف صدیقی کی جانب سے حاضری سے استثنی کی دائر درخواست بھی منظور کر لی ۔ سینٹرل جیل میں قائم انسداد دہشت گردی کی خصوصی عدالت میں سانحہ بلدیہ کیس کی سماعت ہوئی ۔ عدالت میں کیس کے مرکزی ملزم عبدالرحمن عرف بھولا ، زبیر چریا سمیت دیگر کو پیش کیا گیا ۔ عدالت میں کیس میں نامزد دو ڈاکٹرز نے اپنا بیان قلمبند کراتے ہوئے موقف اختیار کیا کہ ہم نے تین فائر بریگیڈ کے ملازمین کی ٹریٹمنٹ کی تھی ۔ تینوں ملازمین فیکٹری کے اطراف میں موجود شہریوں کے پتھراؤ سے زخمی ہوئے تھے ۔ ڈاکٹرز کا کہنا تھا کہ فیکٹری میں جاں بحق ہونے والے لواحقین کے ڈی این اے ٹیسٹ کے نمونے لے کر تفتیشی افسر کے سپرد کیے تھے ۔ عدالت نے آئندہ سماعت پر میڈیکل رپورٹس اور مقدمے میں نامزد مزید ڈاکٹرز کو طلب کیا ۔ دوسری جانب عدالت میں ایم کیو ایم کے رہنما رؤف صدیقی نے حاضری سے استثنی کی درخواست دائر کرائی ، جس میں موقف اختیار کیا گیا کہ انہیں انسداد دہشت گردی کی عدالت نمبر دو نے بیرون ملک جانے کی اجازت دے دی ہے ۔ لہذا انہیں حاضری سے استثنی دیا جائے ۔ عدالت نے ایم کیو ایم رہنما رؤف صدیقی کی حاضری سے استثنی کی درخواست منظو رکرتے ہوئے مزید کارروائی 5 اپریل تک ملتوی کر دی ۔

مزید : کراچی صفحہ اول