مسلم دنیا کا سب سے بڑا چیلنج انتہا پسندی ، دہشتگردی ہے‘ پروفیسر طاہر امین

مسلم دنیا کا سب سے بڑا چیلنج انتہا پسندی ، دہشتگردی ہے‘ پروفیسر طاہر امین

ملتان(جنرل رپورٹر)مسلم دنیا کا سب سے بڑا چیلنج انتہا پسندی اور دہشت گردی ہے. دنیا کے سامنے اسلامی تہْذیب کا اصل تصور پیش کرنا تمام مسلم امہ کی ملی ذمہ داری ہے. ہمیں (بقیہ نمبر14صفحہ12پر )

نوجوانوں کو اسلامی تہذیب کے بارے آگاہی دینی ہوگی. بہاء الدین زکریایونیورسٹی اور انٹرنیشنل اسلامک یونیورسٹی کا اشتراک مسلم امہ کے لیے بہت مفید ہے. . ان خیالات کا اظہارکانفرنس کے صدر نشین وائس چانسلر بہاء الدین زکریایونیورسٹی ملتان پروفیسر ڈاکٹر طاہر امین نے شعبہ علوم اسلامیہ و اسلامک ریسرچ سنٹر بہاء الدین زکریایونیورسٹی ملتان ، ادارہ تحقیقات اسلامی اسلامی یونیورسٹی اسلام آباد بتعاون ہائر ایجوکیشن کمیشن و پنجاب ہائر ایجوکیشن کمیشن کے زیراہتمام دو روزہ بین الاقوامی کانفرنس بعنوان ’’اسلامی تہذیب و ثقافت میں اخذ و عطا اور تازہ کاری کی روایت ‘‘کی اختتامی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا انہو ں نے کہا کہ آج کی کانفرنس امن و سلامتی کا پیام ہے. صدر انٹرنیشنل اسلامک یونیورسٹی اسلام آباد پروفیسر ڈاکٹر احمد یوسف احمد الدرویش درحقیقت درویش صفت انسان ہیں . ان کے خطاب سے اسلامی تہذیب کے تصور کو سمجھنے میں مدد ملی.صدر انٹرنیشنل اسلامک یونیورسٹی اسلام آباد پروفیسر ڈاکٹر احمد یوسف احمد الدرویش نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ اسلام امن و سلامتی کا دین ہے. سلامتی کے دین کے ماننے والے کسی بھی طرح شدت پسند اور دہشت گرد نہیں ہوسکتے . نوجوانوں کو ان جاہل اور گمراہ لوگوں کی سرگرمیوں کا گہرائی سے جائزہ لینا ہوگا. انتہا پسندوں اور دہشت گردوں نے عورتوں ، بچوں اور بزرگ مسلمانوں کا بے دردی سے قتل عام کیا.مذہبی دہشت گردی اور انتہا پسندی کا اسلا م سے دور دورتک کوئی تعلق نہیں. امن و سلامتی ، بھائی چارہ ،حسن سلوک ہماری اسلامی تہذیب کی بنیاد ہیں اسلام کا پیغام امن و رواداری کا پیغام ہے جسے پوری دنیا میں پھیلانا ہے.انہوں نے مزید کہاکہ اسلام کے نام پر انسانیت کا قتل کرنے والے اللہ تعالی کے حضور کیسے پیش ہوں گے. عظیم و عالی شان کانفرنس کے انعقاد پر پروفیسر ڈاکٹر عبدالقدوس صہیب اور ڈاکٹر ضیاء الحق بھرپور خراج تحسین کے مستحق ہیں .انہوں نے خطاب کے اختتامی کلمات میں مسجد اقصی سمیت دنیا بھر کے مسلمانوں کے لیے خصوصی دعاکی اورپاکستان زندہ باد کے نعرے لگوائے . ڈائریکٹر جنرل ادارہ تحقیقات اسلامی بین الاقوامی اسلامک یونیورسٹی اسلام آباد ڈاکٹر محمد ضیاء الحق نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ مسلمان جدید سائنسی دور میں بہت پیچھے رہ گئے ہیں. مسلمانوں کو کھویا ہوا مقام دوبارہ حاصل کرنا ہوگا.اسلامی تہذیب دیگر تہذیبوں سے متصادم نہیں ہے . مسلمانوں کے بنیادی حقوق کا تحفظ ایک سوالیہ نشان ہے. ہندوؤں اور بدھاؤں کو مسلمانوں کا قتل عام بند کرکے بات چیت کا راستہ اختیار کرنا ہوگا. انہو ں نے مزید کہاکہ پیغام پاکستان دراصل برداشت ، ترقی یافتہ ، مستحکم اور پرامن پاکستان کا پیغام ہے. چیئرمین شعبہ علوم اسلامیہ و ڈائریکٹر اسلامک ریسرچ سنٹر بہاء الدین زکریایونیورسٹی ملتان پروفیسر ڈاکٹر عبدالقدوس صہیب نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اسلامی تہذیب اور دیگر تہذیبوں میں بنیادی فرق عقیدے کا ہے. اسلامی تہذیب کو ربانی تہذیب کہتے ہیں جس کی بدولت مسلمانوں نے سائنس و ادب اور علم و تحقیق کے میدان میں کامیابیاں سمیٹیں.اسلامی تہذیب کی بنیادیں حسن اخلاق ،اخوت ، سچائی ، رواداری ، صلہ رحمی ہیں. انہوں نے مزیدکہا کہ کانفرنس میں پاکستان ، بنگلہ دیش ، انڈیا ، کنیڈا ، انگلینڈ سمیت دنیا بھر اور پاکستان کی جامعات سے سکالرز کی شرکت خوش آئند بات ہے. مصر سے مہمان اعزاز ڈاکٹر اشرف عبدالرافع اور ڈاکٹر عبدالرحمن عبدالحمید نے کہاکہ پاکستان اور عرب دنیا کی جامعات کے درمیان تعلقات کو مزید مضبوط کرنے کی ضرورت ہے. پاکستان کی عظیم درس گاہ جامعہ زِکریا میں کانفرنس میں شرکت کرکے مسرت محسوس کررہے ہیں .تقریب سے خطاب کرنے والے دیگر مقررین میں ڈاکٹر عصمت ناز ، ڈاکٹرکاشف محمود ، ڈاکٹر مدثرہ ، رستم خان ، محمدمنیر شامل ہیں . کانفرنس میں ڈین فیکلٹی آف اسلامک سٹڈیز اینڈ لینگوئجز پروفیسر ڈاکٹر شفقت اللہ ، ڈاکٹر فریدہ یوسف ، سلطان محمود ، عاصمہ قربان ، حامد اعوان سمیت فیکلٹی ممبران اور طلباء طالبات نے بھرپور شرکت کی.

مزید : ملتان صفحہ آخر