ہمارے والدین نے اپنے نام سے اراضی اور مکان خریدا ،حافظ

ہمارے والدین نے اپنے نام سے اراضی اور مکان خریدا ،حافظ

بونیر (ڈسٹرکٹ رپورٹر)گاؤں ڈگر سے تعلق رکھنے والے مشتاق احمد ولد عبدالحافظ نے کہاہے کہ میرے والدین 1960 میں ڈگر ائے ہوئے تھے ۔ہم چار بھائی اور پانچ بہنیں ہیں ۔ہم نے نادراسے باقاعدہ شناحتی کارڈ بنوائے ہیں ۔اور گاؤں ڈگر میں اپنے ناموں سے زمین اور گھر بھی خریدی ہیں ۔مگر گاؤں ڈگر کے ایک ادمی نے ہمارے ساتھ ذاتی دشمنی کی بنیاد پر ہمارے او پر جھوٹے الزامات لگائے ہیں ۔جسکا حقیقت سے کوئی تعلق نہیں ہے ۔انہوں نے کہا کہ گذشتہ روز انہوں نے گاگرہ پولیس کے ساتھ مل کر مجھے چرس کے ایک جھوٹے مقدمہ میں شامل کرلیا ہے ۔جس پر مقامی عدالت میں جج نے پولیس اہلکاروں کو بتایا کہ کس کی ایماء پر اس بے گناہ شحص کو گرفتار کیاہے ۔مشتاق احمد کے مطابق میرے دو بھائی ملائیشاء میں پاکستانی پاسپورٹ پر محنت مزدوی کررہے ہیں ۔میں پاکستانی اداروں سے مطالبہ کرتاہوں کہ وہ ڈگر گاؤں اکر ہمارے بارے میں مکمل انکوائیری کرے ۔اگر ہم پاکستانی ہیں تو ہمیں بے جا تنگ کرنے والوں کے خلاف کاروائی کرے اوراگر ہم پاکستانی نہیں ثابت ہوئے توہم ہر سزا کے لئے تیار ہیں ۔جس شحص نے میرے خلاف پولیس کے ساتھ مل کر میرے ساکھ کو نقصان پہنچایا ہے اسکے خلاف کاروائی کی جائے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر