خدا کا قہر اور عذاب نازل ہو اُن پر جو۔۔۔" سینئر صحافی غریدہ فاروقی برس پڑیں

خدا کا قہر اور عذاب نازل ہو اُن پر جو۔۔۔" سینئر صحافی غریدہ فاروقی برس پڑیں
خدا کا قہر اور عذاب نازل ہو اُن پر جو۔۔۔

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)ملک بھرمیں کوروناوائرس کی وجہ سے جہاں لاک ڈاون ہے وہیں بازار میں بیٹھے تاجروں نے قیمتوں میں خود ساختہ اضافہ کرنا شروع کردیا ہے۔ اگرچہ حکومت نے ایسے عناصر کے خلاف سخت کارروائی کا عندیہ دیا ہے تاہم فی الحال صرف کاروباری طبقہ ہی عوام کی جیبوں پر ڈاکے ڈال رہا ہے۔

ملک میں بڑھتی ذخیرہ اندوزی ،اشیائے ضروریہ کی قلت اور قیمتوں میں اضافے پر سینئر صحافی اور اینکر پرسن غریدہ فاروقی پھٹ پڑی ہیں۔ سماجی روابط کی ویب سائٹ ٹویٹر پر دیئے گئے بیان میں انہوں نے کہا"خدا کا قہر اور عذاب نازل ہو اُن پر جو ایسے حالات میں غذائی اجناس کی قلّت پیدا کر رہے ہیں۔ مارکیٹ میں آٹا مہنگا اور غائب ہو رہا ہے۔ سبزی پھل کچن کی دیگر اشیاء مہنگی ہو رہی ہیں۔ وزیراعظم خان صاحب سخت ایکشن لیں، صرف نوٹس نہیں۔ یہ مجرمانہ فعل ہے"۔

واضح رہے کہ پاکستان میں کورونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد 1670 ہو گئی ہے جبکہ 638 مصدقہ متاثرین کے ساتھ پنجاب ملک میں سب سے زیادہ متاثرہ صوبہ بن گیا ہے۔ حکام کے مطابق ملک میں 14 ہزار سے زیادہ مشتبہ مریض ہیں۔پاکستان میں ہلاکتوں کی تعداد 18 ہے جن میں سے چھ کا تعلق پنجاب، پانچ کا خیبر پختونخوا سے ہے جبکہ پانچ مریض سندھ، جبکہ ایک ایک گلگت بلتستان اور بلوچستان میں ہلاک ہوا جبکہ 32 افراد صحت یاب بھی ہوئے ہیں

ملک کے چاروں صوبوں کے علاوہ دارالحکومت اسلام آباد، گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر میں بھی مکمل یا جزوی لاک ڈاؤن ہے جبکہ ملک بھر میں فوج بھی تعینات ہےپاکستان کی حکومت نے چار اپریل تک ملک میں بین الاقوامی فضائی آپریشن معطل کر دیا ہے جبکہ ملک بھر میں ٹرین آپریشن بھی 31 مارچ تک بند کر دیا گیا ہے۔

خیال رہےعالمی بینک اور ایشیائی ترقیاتی بینک نے کورونا وائرس سے نمٹنے کے لیے پاکستان کے لیے بالترتیب 35 کروڑ اور 23 کروڑ 80 لاکھ ڈالر کی امداد کا اعلان کیا ہے۔

مزید :

قومی -