ملک میں نظام مصطفےٰ نافذ ہوتا تو آج کوئی مذہبی و غیر مذہبی فتنہ سرنہ اُٹھاتا، عرفان مشہدی

ملک میں نظام مصطفےٰ نافذ ہوتا تو آج کوئی مذہبی و غیر مذہبی فتنہ سرنہ ...

لاہور (سٹاف رپورٹر) مرکزی جماعت اہلسنّت پاکستان نے کہا ہے کہ اگر اس ملک میں نظام مصطفےٰﷺ نافذ ہوتا تو آج کوئی مذہبی و غیر مذہبی فتنہ سرنہ اُٹھاتا، اس وقت ملک کے حالات انتہائی مخدوش اور تیزی سے خوفناک صورتحال کی طرف بڑھ رہے ہیں حکومت بُری طرح ناکام ہو چکی ہے اور غیر ضروری مسائل میں اُلجھ کر رہ گئی ہے ، حکومت ملک کو استحکام اور عوام کو امن وامان دینے میں ناکا م ہو چکی ہے ان خیالات کا اظہار مرکزی جماعت اہلسنّت پاکستان کے ناظم اعلیٰ پیر سید عرفان مشہدی، پنجاب کے امیر پیر امانت علی شاہ، ناظم اعلیٰ قاضی عبدالغفار قادری سمیت دیگر نے اندرون بھاٹی لاہور میں خطاب کرتے ہوئے کیا

مقررین نے کہا کہ متنازعہ اور گستاخانہ پروگرام ، مارننگ شوز کے نام پر پھیلائی جانے والی بے حیائی کے پروگراموں کی بھرپور مذمت کرتے ہیں۔

مزید : میٹروپولیٹن 4