جماعت اسلامی کا جواہر لعل نہرو یونیورسٹی کے طلباء کیخلاف کیس درج کرنے پر اظہار مذمت

جماعت اسلامی کا جواہر لعل نہرو یونیورسٹی کے طلباء کیخلاف کیس درج کرنے پر ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


سری نگر ( اے این این )جماعت اسلامی مقبوضہ کشمیر نے جواہر لعل نہرو یونی ورسٹی کے طلبہ کے خلاف کیس درج کرنے پر مذمت کی ہے۔ جماعت ترجمان ایڈوکیٹ زاہد علی کے مطابق اظہار رائے کی آزادی انسان کا بنیادی حق ہے اور اس حق کو دنیا کی کوئی حکومت پامال نہیں کرسکتی مگر المیہ یہ ہے کہ جمہوریت کا ڈھنڈورا پیٹنے والا ملک ہندوستان اس حق کو پامال کرنے میں پیش پیش ہے۔کشمیر میں ظلم کے خلاف آواز اٹھانے پر جہاں گولیوں اور ماٹر شلوں کا سہارا لیا جاتھا ہے۔
، اب ہندوستان میں بھی پر امن احتجاج کرنے کو جرم تصور کیا جانے لگا ہے۔ طلبہ کی طرف سے پر امن احتجاج کرنا پھر اس احتجاج کو ملک دشمنانہ اور باغیانہ قرار دینا ثابت کرتا ہے کہ ہندوستان میں اب عدم برداشت کا مادہ جڑ پکڑتا جارہا ہے۔ترجمان کا کہنا تھا کہ کشمیریوں پر ہورہے ظلم و جبر کی داستان کو باہری دنیا تک ابلاغ کرنے کی غرض سے جواہر لعل نہرو نونیورسٹی کے طلبہ اور اساتذہ نے جو پروگرام تشکیل دیا وہ بالکل لائق تحسین ہے اور انہیں کی پیروی میں اب ہندوستان بھر کی ہونیورسٹیاں کشمیریوں کی حمایت کرتے ہوئے نظر آرہے ہیں۔یہی وجہ ہے ہندوستان سمیت دنیا بھر کی چار سو سے زائد یونیورسٹیاں اس مہم میں شامل ہوگیں ہیں اور کشمیریوں کی حمایت میں کھڑی نظر آنے لگی ہیں۔

مزید :

عالمی منظر -