مقبوضہ کشمیر ٗ انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا سلسلہ دراز ٗ 4 بے گناہ نوجوان گرفتار

مقبوضہ کشمیر ٗ انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا سلسلہ دراز ٗ 4 بے گناہ نوجوان ...

سری نگر ( اے این این ) مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی جانب سے انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا سلسلہ دراز ٗکولگام کے چار بے گناہ نوجوانوں کو پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت جیل بھیج دیا ٗتحریک حریت کا واقعہ پر اظہار مذمت ٗپلوامہ میں مجاہدین کی فائرنگ سے دو پولیس اہلکار ہلاک ٗ ایک زخمی ٗ فائرنگ سے بازار میں بھگدڑ مچ گئی ٗ لوگوں نے محفوظ مقامات کی طرف بھاگ کر جانیں بچائیں ٗ مجاہدین کارروائی کے بعد بچ نکلنے میں کامیاب ٗ بھارتی فوج کا سرچ آپریشن شروع ۔ تفصیلات کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی جانب سے انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا سلسلہ جاری ہے ۔

تازہ کارروائی میں کولگام کے چار بے گناہ نوجوانوں کو پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت جیل بھیج دیاگیا ۔تحریک حریت نے کولگام میں نوجوانوں کی پکڑ دھکڑ چھاپوں اور خانہ تلاشیوں کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ پولیس، ایس ٹی ایف اور فوج مل کر رات کے اندھیرے میں گھروں میں داخل ہوکر جوانوں کو گرفتار کررہی ہے اور مکینوں کو بھی زبردست ہراساں کیا جارہا ہے۔ چھاپوں میں فیروز احمد ایتو ولد محمد امین، شاکر احمد ایتو ولد غلام محی الدین ایتو، مزمل احمد ایتو ولد غلام قادر ایتو اور ارشاد احمد شیخ ولد غلام رسول شیخ ساکنان قیموہ کو گرفتار کیا جاچکا ہے۔ یہ بات بھی قابل ذکر ہے کہ فیروز احمد ایتو کے ایک بھائی خورشید احمد ایتو کو این آئی اے نے چند ماہ قبل گرفتار کیا ۔گرفتار شدگان کے اہل خانہ کو زبردست عتاب کا شکار ہونا پڑرہا ہے۔ تحریک حریت ان کی گرفتاری کو انتقام گیری سے تعبیر کرتی ہے۔ اسی طرح آرونی کے تین نوجوانوں پر بلاجواز پبلک سیفٹی ایکٹ نافذ کرکے جیل بھیجنا سرکاری دہشت گردی ہے۔

مزید : عالمی منظر