غیر قانونی کمرشل تعمیرات کی بھرمار ، ایل ڈی اے کو کروڑوں کا نقصان

غیر قانونی کمرشل تعمیرات کی بھرمار ، ایل ڈی اے کو کروڑوں کا نقصان

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 لاہور ( اپنے خبر نگار سے )شہر بھر کا کمرشل کنٹرول ایل ڈی اے کے پاس ہونے کے باوجودسٹی گورنمنٹ کے افسران اور اہلکار غیر قانونی کمرشل تعمیرات کرانے میں مصروف عمل ہیں ،جس سے ایل ڈی اے کو کروڑوں روپے کا نقصان ہو رہا ہے ایل ڈی اے کی حدود بڑھنے کی وجہ سے اتھارٹی کے ملازمین ضلع قصور ننکانہ صاحب اور شیخو پورہ میں مصروف ہیں جس کی وجہ سے شہر میں غیر قانونی کمرشل تعمیرات کی بھر مار ہو گئی ہے تفصیلات کے مطابق صوبائی دارلحکومت میں تمام کمرشل کنٹرول لاہور ڈیویلپمنٹ اتھارٹی کے پاس ہے ،لیکن اس کے باوجودڈسٹرکٹ گورنمنٹ کے افسران اور اہلکار غیر قانونی کمرشل تعمیرات کروا رہے ہیں جس کو ایل ڈی اے روکنے میں ناکام ہو گئی ہے جس سے ایل ڈی اے کوکروڑوں کا نقصان ہو رہا ہے کیونکہ ایل ڈی اے پہلے پلاٹ کو کمرشل کرتا ہے اور اس کے بعد پلاٹ کا کمرشل نقشہ منظور ہوتاہے اور یوں اتھارٹی کے خزانے میں 30سے35لاکھ فی پلاٹ جمع ہوتا ہے جو کہ سٹی گورنمنٹ کے ملازم صرف اپنی جیبیں بھر رہے ہیں جبکہ سرکاری خزانے میں ایک پائی تک جمع نہیں کرائی جاتی ،اس وقت شہر میں سینکڑوں مقامات پرغیر قانونی کمرشل تعمیرات کا سلسلہ جاری ہے جس کی وجہ سے ایل ڈی اے کو کروڑوں روپے کا نقصان اٹھانا پڑھ رہاہے ذرائع نے بتایا ہے کہ لاہور ڈیویلپمنٹ اتھارٹی کا کنٹرول ایریا اب لاہور کے علاوہ قصور ننکانہ صاحب اور شیخو پورہ تک بڑھ گیا ہے اور ایل ڈی اے کا عملہ زیادہ تر کام کی وجہ سے لاہور سے باہر مصروف عمل رہتا ہے ، جس کا ناجائز فاہدہ سٹی گورنمنٹ کا عملہ اٹھا رہا ہے جس سے اتھارٹی کو ماہوارکروڑوں روپے کا رقصان اٹھانا پڑھ رہا ہے اس حوالے سے جب ایل ڈی اے کے افسران سے بات کی گئی تو انہوں نے بتایا کہ ایسی بات نہیں ہے یہ بات ہمارے علم میں ہے کہ شہر میں غیر قانونی کمرشل تعمیرات ہو رہی ہیں اتھارٹی نے اس کے لئے عملہ تعینات کر دیا ہے جو ان غیر قانونی تعمیرات کی لسٹ تیار کر رہا ہے جیسے ہی لسٹ مکمل ہوتی ہے، توان تمام غیر قانونی تعمیرات کے مالکان کو کمرشل چاجز اور نقشہ کی کمرشل فیس کے علاوہ بغیر اجازت تعمیر کرنے کا جرمانہ بھی وصول کیا جائے گا اور اتھارٹی اپنے واجبات مالکان سے وصول کرے گی