مافیا نے مصنوعی دودھ کی سپلائی کر کے شہریوں کی زندگی سے کھیلنا شروع کر دیاہے،حاجی سعید

مافیا نے مصنوعی دودھ کی سپلائی کر کے شہریوں کی زندگی سے کھیلنا شروع کر ...

لاہور ( خبرنگار )عالمی منڈی میں خشک دودھ کی قیمت میں کمی اور پاکستان میں کم درآمدی ڈیوٹی کا فائدہ اٹھاتے ہوئے مافیا نے صو بائی دارلحکو مت سمیت ملک بھر میں جعلی اور مصنوعی دودھ کی سپلائی کر کے بچوں اور شہریوں کی زندگی سے کھیلنا شروع کر دیاہے جس سے نہ صرف لائیو سٹا ک ا ور ڈیری فارمنگ سے وابستہ کسانوں کا معاشی استحصال ہو رہا ہے بلکہ ماہرین کے مطابق خشک دودھ کا استعمال بچوں کی نشو نما پر منفی اثرات چھوڑ رہا ہے ۔ حکو مت وقت فو ڈ سیکیورٹی پلان کو یقینی بنانے کے لیے خشک دودھ کی درآمد پر سو فیصد ڈیو ٹی عائد کر ے ۔ ان خیالات کا اظہار بفلو بریڈر ایسو سی ایشن پنجاب پاکستان کے صدر حاجی سعید ہو تیانہ نے گزشتہ روز ہنگامی اجلاس کی صدارت کر تے ہوئے کیا ۔

جبکہ اس موقع پر بفلو بر یڈراور کسانوں کی کثیر تعداد مو جو د تھی۔انھوں نے کہا کہ ڈیری فارمنگ سے ملک کے بے شمار خاندانوں کا روزگار اور فو ڈ سیکیورٹی وابستہ ہے ۔

انھوں نے کہا کہ زراعت میں زبوں حالی کی وجہ سے کھیتی باڑی سے منسلک کسان پہلے ہی مسائل سے دوچار ہیں ۔ ماضی قر یب میں خشک دودھ کی درآمد میں اضافہ سے لابیو سٹاک اور ڈیری فارمنگ سے وابستہ کسانو کی معیشت پر منفی اثرات مر تب ہو رہے ہیں ۔انھوں نے بتایا کہ پاکستان میں خشک دودھ کی درآمد پر ڈیو ٹی صرف بیس فیصد ہے جبکہ ہمسایہ ملک بھارت میں 68فیصد اور تر کی میں 180فیصد ہے ۔عالمی منڈی میں خشک دودھ کی قیمتوں میں کمی اور پاکستان میں کم درآمد ی ڈیو ٹی کا فائدہ اٹھاتے ہوئے دودھ کی کمپنیوں اور دودھی حضرات نے خشک دودھ کی درآمد میں کئی گنا اضافہ کر دیا ہے جس کے نتیجہ میں مقامی مارکیٹ میں جعلی اور مصنوعی دودھ کی سپلائی میں بھی خاطر خواہ اضٗافہ ہوا ہے جس سے نہ صر ف مقامی کسانوں کو نقصان کا سامنا لاحق ہے بلکہ جعلی دودھ کی تر سیل سے شہریوں کی زندگی پر بھی برے اثرات مر تب ہو رہے ہیں ۔انھوں نے کہا کہ خشک دودھ کی تیاری کے وقت صحت کے اصو لوں کو مد نظر نہیں رکھا جاتا جس کا استعمال انسانی صحت کے لیے غیر موزوں ہے ۔ انھوں نے کہا کہ خشک دودھ کی وجہ سے ڈیری فارمز مالکان کے کاروبار پر بھی منفی اثرات رونما ہو رہے ہیں۔جس کے سد باب کے لیے حکو مت کو سنجیدگی کا مظاہرہ کر نا چائیے ۔ بفلو بر یڈر ایسو سی ایشن نے حکو مت وقت سے مطالبہ کیا ہے کہ اگر کسانوں کو بچانا ہے اور فو ڈ سیکیورٹی کو عملی جامہ پہنا نا ہے تو خشک دودھ کی درآمد پر سو فیصد ڈیو ٹی عائد کی جائے تاکہ دودھ مافیا کی حو صلہ شکنی اور مقامی مو یشی پال حضرات اور ڈیر ی انڈسٹری کی حوصلہ افزائی ہو سکے جس سے ملکی معیشت پر بھی مثبت اثرات مر تب ہو نگے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 4