ملکی سلامتی پر امریکی حملے کسی صورت قابل برداشت نہیں، عبدالغفار روپڑی

ملکی سلامتی پر امریکی حملے کسی صورت قابل برداشت نہیں، عبدالغفار روپڑی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(نمائندہ خصوصی) پاکستان میں امریکی ڈرون حملے ملک کو غیر مستحکم کرنے کی سازش ہے۔ ملکی سلامتی پر امریکی حملے کسی بھی صورت قابل برداشت نہیں۔ حکمت عملی کے تحت اختیار کی گئی مجرمانہ خاموشی توڑنی ہو گی۔ حکمران دبنے کی بجائے جرات و بہادری کا مظاہرہ کرتے ہوئے دو ٹوک موقف اپنائیں۔ ان خیالات کا اظہار جماعت اہل حدیث پاکستان کے امیر حافظ عبدالغفار روپڑی نے گذشتہ روز جامعہ دارالقدس چوک دالگراں لاہور میں تنظیمی ذمہ داران کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ ایک دفعہ پھر امریکہ من گھڑت مفروضوں کو بنیاد بنا کر پاکستانی کی سالمیت پر نشانے داغ رہا ہے جس کی بروقت عملی مذمت نہ کی گئی تو مستقبل اس سے پہنچنے والے نقصان کا اندازہ لگانا مشکل ہے۔ انہوں نے کہا کہ دہشتگردی کے خلاف نام نہاد جنگ میں شریک ہو کر ہم اپنی ہی سر زمین کو خون میں نہلا رہے ہیں۔ اس نام نہاد جنگ میں ابھی تک سب سے زیادہ نقصان پاکستان نے اٹھایا ہے۔ گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ڈرون حملے پاکستان کی سلامتی اور خودمختاری کے لیے چیلنج ہیں اور ان میں خواتین اور بچوں سمیت بے گناہ افراد کے جاں بحق ہونے کی وجہ سے دہشت گردی میں اضافہ ہو رہا ہے۔ انہوں نے پاکستانی حکمرانوں سے مخاطب کرتے ہوئے کہا کہ وہ مجرمانہ خاموشی کی روش کو چھوڑ کر اس مسئلے کو عالمی سطح پر اٹھائیں اور اقوام متحدہ سمیت عالمی برادری پاکستان میں عالمی قوانین خلاف ورزی کا فوری نوٹس لے۔ دریں اثناء انہوں نے وزیراعظم پاکستان کی کامیاب ہارٹ سرجری اور جلد صحت یابی کی دعا بھی کی۔
عبدالغفار روپڑی

مزید :

علاقائی -