کاشتکاروں کی پریمیم کی رقم واپس نہ کی گئی تو شوگر ملز کا گھیراؤہو گا

کاشتکاروں کی پریمیم کی رقم واپس نہ کی گئی تو شوگر ملز کا گھیراؤہو گا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

کراچی(اسٹاف رپورٹر) سندھ نیشنل پارٹی کے رہنماؤں نے کہاہے کہ سندھ کی شوگرملز انتظامیہ اور پاسماکسانوں اور کاشتکاروں کی پریمیم کی رقم واپس کرے اور اپنا قبلہ درست کرے بصورت دیگرشوگرملز اور پاسما کے ہیڈ آفسز کا گھیراؤ کیا جائے گا۔ ان خیالات کا اظہار سندھ نیشنل پارٹی کے سربراہ امیر بھنبھرو، وائس چیئرمین رمضان بلیدی اور مرکزی جنرل سیکرٹری ڈاکٹر اصغر ڈاہری نے اتوارکومشترکہ بیان میں کیا۔رہنماؤں نے کہا کہ 27 سالوں سے سندھ کی شوگرملز انتظامیہ اور ان کی تنظیم پاسما غریب اور مسکین سندھ کے کاشتکاروں اور کسانوں کے پریمیم کے 27 ارب روپے اور سندھ حکومت کی جانب سے کاشتکاروں اور کسانوں کیلئے شوگرملزکو دی گئی سبسڈی کے 10 ارب روپے بھی ہڑپ کرنا چاہتی ہے، شوگرملز انتظامیہ اور ان کی تنظیم پاسما نے ظلم کی انتہا کردی ہے، کاشتکار اور کسان دن رات محنت کرکے گنے کی فصل تیار کرکے شوگرملز کی طرف بھیجتے ہیں بدلے میں انہیں صحیح اور وقت پر رقم نہیں دی جاتی، کاشتکار اور کسان دو وقت کی روٹی کیلئے بھی پریشان ہیں، جبکہ ملز مالکان اربوں روپے کما کر مزدوروں کے پسینے سے زیادتی کررہے ہیں، مرکزی رہنماؤں نے مزید کہا کہ ایک طرف سندھ کے شوگرملز مالکان مزدوروں سے زیادتی کررہے ہیں تو دوسری جانب عوام کے حقوق کی حفاظت کرنے کی دعویدار سندھ حکومت بہری اور گونگی بن کر بیٹھی ہے، اربوں روپے کی کرپشن پر سندھ حکومت کی خاموشی سمجھ سے بالاتر ہے، پیپلز پارٹی کو سندھ کے عوام نے اس لئے ووٹ دیا تھا کہ وہ اقتدار میں آکر سندھ اور سندھی عوام کی خدمت کرے گی، سندھ کے لوگوں کے حقوق کی حفاظت اورترجمانی کرے گی، عوام کو روزگار سمیت دیگر بنیادی سہولیات فراہم کرے گی، لیکن افسوس کے ساتھ کہنا پڑ رہا ہے کہ پوری سندھ وینٹلیٹر پر آچکی ہے، پھر بھی حکمران اپنی من مستی میں مصروف ہیں، سندھ حکومت کاشتکاروں اور کسانوں کے بنیادی حقوق اور شوگرملز انتظامیہ سے کاشتکاروں اور کسانوں کے پریمیم کے 27 ارب روپے واپس نہ کرائے تو سندھ کے لوگ آئندہ پیپلز پارٹی کو مینڈیٹ دینے کیلئے ہزار بار سوچنے پر مجبور ہونگے، ایس این پی کے مرکزی رہنماؤں نے مزید کہا کہ ہم سندھ کے کاشتکاروں اور کسانوں کے حقوق کی حفاظت کرینگے، کاشتکار، مزدور اور کسانوں کے حقوق کسی کو بھی غضب کرنے نہیں دینگے، شوگرملز انتظامیہ اور پاسما نے اپنی ضد نہ چھوڑی تو دیگر صورت میں پارٹی کی جانب سے ملز اور پاسما کی ہیڈ آفیسوں کا گھیراؤ کیا جائے گا اور مرحلیوار احتجاجی تحریک شروع کی جائے گی۔