مصر میں 4نوجوانوں کو ایک ایسی ویڈیو بنانے پر جیل میں ڈال دیا گیا جو پاکستان میں ہزاروں نوجوان روز بناتے ہیں

مصر میں 4نوجوانوں کو ایک ایسی ویڈیو بنانے پر جیل میں ڈال دیا گیا جو پاکستان ...
مصر میں 4نوجوانوں کو ایک ایسی ویڈیو بنانے پر جیل میں ڈال دیا گیا جو پاکستان میں ہزاروں نوجوان روز بناتے ہیں

  

قاہرہ(مانیٹرنگ ڈیسک)ہمارے ہاں تو سوشل میڈیا صارفین کو اس قدرآزادی حاصل ہے کہ کسی شتربے مہار کی طرح جس کو چاہیں روند کر رکھ دیں۔ یہاں کوئی بھی سوشل میڈیا صارف کسی بھی اعلیٰ مقام و مرتبے کی علمی و ادبی یا حکومتی شخصیت کی جیسے چاہے تضحیک کرے، کوئی پوچھنے والا نہیں، مگر باقی ممالک میں سوشل میڈیا پر ایسی آزادی حاصل نہیں۔ مصر میں ایسے ہی 4 سرپھرے سوشل میڈیا صارفین کو گرفتار کر لیا گیا ہے جنہوں نے ایک ویڈیو میں حکومت کا تمسخر اڑایا تھا۔ ان لوگوں نے فیس بک پر سٹریٹ چلڈرن کے نام سے ایک گروپ بنا رکھا تھا جس میں حکومت مخالف ویڈیوز پوسٹ کرتے تھے۔ ان کی حالیہ ویڈیو میں ملکی کرنسی کی قدر میں ہونے والی کمی اور ملک کے دو جزیرے سعودی عرب کے حوالے کرنے کے معاملات پر استہزائیہ انداز میں تنقید کی گئی تھی۔ ان ملزمان کے نام محمد عدیل، محمد جیبر، محمد الدیسوکی اور محمد یحییٰ ہیں۔ پولیس نے انہیں گرفتار کرکے عدالت میں پیش کیا اور الزام عائد کیا کہ ان کی پوسٹ کی گئی ویڈیو سے عوام کو حکومت کے خلاف احتجاج اور دہشت گردانہ کارروائیوں کی تحریک مل رہی ہے۔ عدالت نے انہیں 15روزہ ریمانڈ پر جیل بھیج دیا ہے۔ ان کے ایک پانچویں ساتھی عثمان کو بھی گرفتار کیا گیا تھا تاہم اسے 10ہزارمصری پاؤنڈ(تقریباً ڈیڑھ لاکھ روپے) کے عوض ضمانت پر رہا کر دیا گیا۔ واضح رہے کہ کچھ عرصہ قبل مصر نے اپنے دو جزیرے سعودی عرب کے حوالے کیے تھے جس پر ملک بھر میں احتجاج کیا گیا تھا۔ تب سے سکیورٹی فورسز سوشل میڈیا صارفین، بلاگرز ، وکلاء، صحافیوں اور فلاحی کارکنوں کے خلاف کریک ڈاؤن جاری رکھے ہوئے ہے۔

مزید جانئے: عرب بچی کو نوٹوں میں تول دیا گیا، کس کارنامے پر یہ انعام دیا گیا؟ جان کر آپ شاید حسد میں مبتلا ہوجائیں

مزید : عرب دنیا