سبزی منڈی میں نیلامی کے عمل کی کڑی مانیٹرنگ کا فیصلہ

سبزی منڈی میں نیلامی کے عمل کی کڑی مانیٹرنگ کا فیصلہ

  

لاہور (جنرل رپورٹر)صوبائی وزیر منصوبہ بندی ترقیات و کنوینر رمضان پیکیج2017ملک ندیم کامران نے کہا ہے کہ صوبہ کے تمام ڈپٹی کمشنر زاور ڈسٹرکٹ پولیس افسران جاری کردہ ہدایات کے مطابق اپنی متعلقہ منڈیوں میں نیلامی کے وقت اپنی موجودگی یقینی بنائیں ۔جاری کردہ ہدایات پر عدم عملدرآمد کی صورت میں کارروائی عمل میں لائی جائے گی ۔انہو ں نے یہ بات سول سیکرٹریٹ کے کمیٹی روم میں رمضان پیکیج کے انتظامات کے حوالے سے اعلیٰ سطحی اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کہی۔ اس موقع پروزیر زراعت پنجاب ، چیف سیکرٹری پنجاب کیپٹن ( ر) زاہد سعید اور تمام متعلقہ محکموں کے سیکرٹری صاحبان بھی موجود تھے ۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ ڈپٹی کمشنرز اور ڈسٹرکٹ پولیس افسران کی منڈیوں میں موجودگی کو سپیشل برانچ کی رپورٹ کی روشنی میں چیک کیا جائے گا ۔صوبائی وزیر نے کہا کہ رمضان انتظامات کے حوالے سے صرف لاہور اور بڑے شہروں پرہی توجہ نہ دی جائے بلکہ چھوٹے اضلاع میں بھی لاہور کی طرز پر انتظامات پر فوکس کیاجائے ملک ندیم کامران نے کہا کہ رمضان بازاروں کے حوالے سے تمام اضلاع میں ضرورت کے مطابق اشیائے ضروریہ کے سٹاکس موجود ہونے چاہئیں تاکہ کسی جگہ کسی چیز کی کمی نہ ہو اور اشیائے ضروریہ کی کمی کی صورت میں فوراً اسے سٹاک میں شامل کیاجائے ۔ انہوں نے کہا کہ صرف رمضان بازاروں پر ہی فوکس نہ کیا جائے بلکہ اوپن مارکیٹوں میں بھی مقررہ قیمتوں پر اشیائے ضروریہ کی فراہمی یقینی بنائی جائے ۔چیف سیکرٹری پنجاب کیپٹن ( ر) زاہد سعید نے اجلا س میں موجودسیکرٹری لائیو سٹاک کو تمام اضلاع سے مٹن کی قیمتیں معلو م کرکے آئندہ اجلاس میں رپورٹ پیش کرنیکی ہدایت کی۔ انہوں نے اجلاس کو بتایا کہ یکم رمضان کو صوبہ کے 27ماڈل بازاروں سمیت 319رمضان بازاروں میں10کلو وزن کے ایک لاکھ 39ہزار 6سو آٹے کے تھیلے فروخت ہوئے ۔انہوں نے کہا کہ تمام رمضان بازاروں اورماڈل بازاروں میں اشیائے ضروریہ کے معیار اور مقدارپرخصوصی توجہ دی جائے ۔انہوں نے کہا کہ ماہ مقدس میں اشیاء کی فراہمی میں غفلت کے مرتکب افسران کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی ۔ انہوں نے مزید کہا کہ تمام ڈپٹی کمشنرز اورضلعی انتظامیہ کے افسران رمضان بازاروں کے روزانہ کی بنیاد پر دورے کریں اوراپنی رپورٹس اپنے متعلقہ کمشنر صاحبان کو بھجوائیں۔ تمام ڈپٹی کمشنرزدورہ کرنے والے وزراء وسیکرٹری صاحبان کے دورے کی بھی رپورٹ پیش کریں۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -