ایوان بالا اجلاس : اپوزیشن ارکان نے بجٹ عوام دشمن قرار دیتے ہوئے مسترد کر دیا ، بجٹ متوازن اور عوام دوست ہے : احسن اقبال

ایوان بالا اجلاس : اپوزیشن ارکان نے بجٹ عوام دشمن قرار دیتے ہوئے مسترد کر دیا ...

  

اسلام آباد(آن لائن ) ایوان بالا میں اپوزیشن اراکین نے حکومتی بجٹ کو عوام دشمن قرار دیتے ہوئے یکسر مسترد کر دیا ہے ،سرکاری ملازمین کی تنخواہوں میں مہنگائی کی شرح سے اضافہ نہیں کیا گیا ہے بجلی کے مہنگے منصوبوں کا بوجھ عوام پر ڈالا جا رہا ہے ملک میں تعلیم اور صحت کی حالت زار خراب ہے جبکہ حکمران میٹرو منصوبوں پر لگے ہوئے ہیں جبکہ وفاقی وزیر منصوبہ بندی احسن اقبال نے بجٹ کو متوازن اور عوام دوست قرار دیا ہے ایوان بالا میں مالی سال 2017/18کے بجٹ پر بحث کا آغاز کرتے ہوئے پیپلز پارٹی کے سینیٹر سلیم مانڈوی والا نے کہا کہ وزیراعظم ہیلتھ کارڈ سکیم کا آغاز تو کردیا گیا ہے لیکن اس سکیم کے تحت کارڈ حاصل کرنے والوں کو ہیپا ٹائٹس جیسے بڑے مرض کے علاج کی سہولیات حاصل نہیں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان پیپلز پارٹی نے جو شیڈو بجٹ دیا ہے اس میں تنخواہوں میں 25 فیصد اضافے کی تجویز دی تھی۔ سرکاری ملازمین کی تنخواہوں اور پنشن میں اضافے سے ہی وہ دو وقتکی روٹی سکون سے کھا سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ تعلیم کے شعبے کی یہ حالت ہے کہ اس وقت بھی دو کروڑ سے زائد بچے سکول نہیں جاتے‘ بجٹ میں عوام کے لئے کوئی خاص ریلیف نہیں دیا گیا۔ اس موقع پر وفاقی وزیر منصوبہ بندی ا احسن اقبال نے کہا کہ پی ایس ڈی پی بجٹ کا اہم جز ہوتا ہے جس سے حکومت اپنے ترقیاتی ایجنڈے کو آگے بڑھاتی ہے انہوں نے کہاکہ ماضی میں ترقیاتی ایجنڈے کے ذریعے کئی منصوبے شروع کردیئے جاتے تھے جس سے کوئی منصوبہ مطلوبہ فنڈز حاصل نہیں کرپاتا تھا انہوں نے کہا کہ توانائی کا بحران اور بنیادی ڈھانچے کی ترقی میں رکاوٹیں پیدا ہو جاتی تھیں ہم نے وژن 2025ء تشکیل دیا اور اس میں تمام صوبائی حکومتوں سے مشاورت کی گئی تھی انہوں نے اس کی مکمل حمایت کی ہے انہوں نے کہا کہ پچھلے چار سال سے تین بڑے ترجیحی شعبوں کے لئے فنڈز کی فراہمی پر زیادہ توجہ دی گئی انہوں نے کہا کہ 2010ء میں کئی شعبے صوبوں کو منتقل کردیئے گئے لیکن وفاقی حکومت صوبوں کی معاونت بھی کرتی ہے قومی بنیادی ڈھانچے کی ترقی وفاقی حکومت کی ذمہ داری ہے انہوں نے کہا کہ 14 ارب ڈالر کے دیامر بھاشا ڈیم کی تعمیر سے پورے ملک کو فائدہ ہوگا جبکہ داسو ڈیم کی تعمیر پر بھی ایک ارب ڈالر خرچ ہونگے اور اس کے فوائد پورے ملک کو حاصل ہوں گے انہوں نے کہا کہ پی ایس ڈی پی کا دائرہ علاقائی یا صوبائی نہیں ہے بلکہ یہ پورے ملک کے لئے ہوتا ہے پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار 10 کھرب روپے سے زائد کا پی ایس ڈی پی بنایا گیا ہے 300 ارب روپے سے یہ 10 کھرب روپے تک بڑھ گئے ہیں انہوں نے کہا کہ صوبوں کا بجٹ 11 سو ارب روپے سے زائد ہے ٹیکس وصولی میں اضافے سے صوبوں کے سالانہ ترقیاتی پروگرام بھی بڑھ گئے ہیں انہوں نے کہا کہ 90 فیصد رقم جاری منصوبوں کے لئے مختص کی گئی ہے ہماری کوشش ہے کہ مالیاتی نظم و ضبط لائیں اور جاری منصوبے کم سے کم وقت میں مکمل کئے جائیں گے انہوں نے کہا کہ 411ارب روپے بنیادی ڈھانچے اور 400 ارب روپے توانائی کے شعبے کے لئے مختص کئے گئے انہوں نے کہاکہ بجٹ میں نوجوانوں کے لئے بہت سے پروگرام شروع کرنے کی تجویز دی ہے اور اگلے دو سالوں میں پاکستان کا کوئی ایک ضلع نہیں ہوگا جہاں پر کسی یونیورسٹی کا ذیلی کیمپس نہ ہو۔ انہوں نے کہا کہ بلوچستان کے مخصوص حالات کے پیش نظر پانی کے منصوبوں کے لئے 17 ارب روپے مختص کئے گئے ہیں۔ آزاد کشمیر‘ گلگت بلتستان اور فاٹا کے لئے بھی این ایف سی سے حصہ نکالنے کی وزیراعظم نے وزراء اعلیٰ سے اپیل کی ہے۔ ہم نے آزاد کشمیر کے لئے مختص رقم 12 ارب روپے سے 22 ارب کردی ہے۔ گلگت بلتستان کے لئے فنڈز 10 ارب روپے سے بڑھا کر 15 ارب روپے کردیئے۔ انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان میں میڈیکل کالج بھی بنایا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ فاٹا کے لئے گرانٹ میں اڑھائی ارب روپے بڑھائے گئے ہیں۔ ایف بی آر میں بدعنوانی کی روک تھام کرنا ہوگی اور ایف بی آر میں اصلاحات لاکر ٹیکس وصولی بڑھانا ہوگی ۔

ایوان بالا

مزید :

علاقائی -