یروشلم میں متنازعہ کیبل کار منصوبہ، اسرائیل نے منظوری دے دی

یروشلم میں متنازعہ کیبل کار منصوبہ، اسرائیل نے منظوری دے دی

  

تل ابیب(این این آئی)اسرائیلی حکومت نے مقبوضہ فلسطینی علاقوں پر قبضے کے پچاس برس پورے ہونے پر یروشلم کے قدیم مشرقی حصے میں ایک متنازعہ کیبل کار منصوبے کی منظوری دے دی ہے، جو فلسطینیوں کے علاوہ بین الاقوامی برادری کو بھی مزید ناراض کر دے گا۔

میڈیارپورٹس کے مطابق یہ متنازعہ منصوبہ مشرقی یروشلم کے اس قدیمی حصے میں مکمل کیا جائے گا، جس پر اسرائیل نے 1967ء کی عرب اسرائیلی جنگ کے دوران قبضہ کر لیا تھا اور پھر بعد ازاں دیگر مقبوضہ فلسطینی علاقوں کے ساتھ ساتھ ان علاقوں کو بھی اسرائیلی ریاست کا حصہ بنانے کا اعلان کر دیا تھا۔اس منصوبے کے تحت مغربی یروشلم میں ایک سابقہ ریلوے اسٹیشن کے قریب سے لے کر مشرقی یروشلم کے قدیمی حصے تک ایک کیبل کار پروجیکٹ مکمل کیا جائے گا، اور یہ سب کچھ ایک ایسے علاقے میں جو 1967ء کی چھ روزہ جنگ کے بعد سے اسرائیل کے قبضے میں ہے لیکن جسے بین الاقوامی برادری نے اسرائیل کا حصہ تسلیم نہیں کیا۔یہ کیبل کار منصوبہ 1.4 کلومیٹر طویل ہو گا، جس پر اسرائیلی وزارت سیاحت کے مطابق قریب 56 ملین یورو کے برابر لاگت آئے گی اور یہ 2021ء سے کام کرنا شروع کر دے گا۔ حکومتی ذرائع کے مطابق اس منصوبے کے ذریعے شہر کے اس علاقے میں سیاحت کو فروغ دیا جائے گا۔

مزید :

عالمی منظر -