صوابی میں ڈاکٹروں ،ایم ایس اور عملہ کا احتجاجی مظاہرہ

صوابی میں ڈاکٹروں ،ایم ایس اور عملہ کا احتجاجی مظاہرہ

  

صوابی( بیورورپورٹ)ڈسٹرکٹ ہیڈ کوارٹر ہسپتال صوابی کے ڈاکٹروں ، ایم ایس ، ڈی ایم ایس سمیت تمام عملہ نے تحصیل ناظم صوابی واحد شاہ کی جانب سے اپنے مسلح ساتھیوں کے ہمراہ ہسپتال پر حملے ، گالی گلوچ اور نازیبا زبان استعمال کرنے کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا بعد ازاں ایک احتجاجی اجلاس میں اس واقعہ پر غم و غصے اور تشویش کااظہار کر تے ہوئے متفقہ طور پر ایک قرار داد منظور کی گئی جس میں کہا گیا کہ مذکورہ تحصیل ناظم اس سے پہلے کئی بار بھی ہسپتال میں اس طرح مسلح افراد کے ساتھ داخل ہو کر ہسپتال عملہ کو ہراساں کرنے اور غیر مناسب زبان کے استعمال کا مرتکب ہوا ہے جو کہ انتہائی نا مناسب اور ناقابل بر داشت ہے اس کے علاوہ آئے دن ہسپتال میں غیر متعلقہ افراد بلکہ مسلح افراد اس طرح بلا ناغہ پولیس کی موجودگی کے باوجود کار سرکار میں مداخلت کر تے ہیں اور عملہ کی بے عزتی کو اپنا فخر سمجھتے ہیں بائیس مئی کو بھی ایک اور فرد جس نے آپریشن تھیٹر کے اندر گھس کر عملے کی بے عزتی کی اور دھمکیاں بھی دی قرار داد میں یہ بھی فیصلہ کیا گیا کہ وقوعہ کی رپورٹ لوکل ایڈ منسٹریشن کو پیش کی جائے گی اور ایم ایس سے بھی یہ مطالبہ کیا گیا کہ وقوعہ کی ایف آئی آر رپورٹ کریں قرار داد میں فیصلہ کیا گیا کہ اگر آج منگل کی دو پہر بارہ بجے تک ضلعی انتظامیہ اور پولیس کی طرف سے عملی اور فوری اقدامات نہ اُٹھائے گئے تو ہسپتال کا عملہ سخت رویہ اختیار کر کے علامتی ہڑتال پر مجبور ہو جائیگا اجلاس میں ایک کمیٹی بھی تشکیل دی گئی جس میں ہسپتال عملے کے تمام کیڈر کے نمائندے شامل ہے جو آئندہ کے لائحہ عمل میں تمام عملے کی نمائندگی کرئے گی#

مزید :

کراچی صفحہ اول -