وفاق نے بجٹ میں خیبرپختونخوا کو یکسر نظر انداز کیا:مظفر سید ایڈووکیٹ

وفاق نے بجٹ میں خیبرپختونخوا کو یکسر نظر انداز کیا:مظفر سید ایڈووکیٹ

  

پشاور( سٹاف رپورٹر)خیبرپختونخوا کے وزیر خزانہ مظفر سید ایڈوکیٹ نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت نے بجٹ میں ڈپلومیسی سے کام لیکر ہمارے صوبے کو یکسر نظرانداز کیاہے ۔ PSDP میں کوئی بڑا منصوبہ شامل کیاگیاہے اورنہ ہی ہمارے تجویز کردہ منصوبوں پر سنجیدگی سے غور کیاگیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ رائیلٹی اوراین ایف سی ایوارڈ کی مد میں مرکزی حکومت پہلے سے ہمارا مقروض ہے اس کے باوجود ہمارے صوبے کے ساتھ سوتیلی ماں جیسا سلوک رواں رکھنا انتہائی ظلم اور ناانصافی ہے۔ ان خیالات کااظہارا نہوں نے بروز پیراپنے دفتر میں میڈیا کے نمائندوں اوردرگئی بارکونسل کے صدر کو 30 لاکھ روپے مالیت کاچیک دیتے ہوئے کیا جوان کا ایک دیرینہ مطالبہ تھا۔ وزیر خزانہ مظفر سید ایڈوکیٹ نے افسوس کااظہار کرتے ہوئے کہا کہ وفاقی وزیر خواجہ آصف ہمارے صوبے کے عوام کو بجلی کی وجہ سے چورکہتے ہیں جو کہ انتہائی غیر اخلاقی اور غیر تربیت یافتہ ہونے کا ثبوت فراہم کررہے ہیں۔ ان کا مطالبہ تھاکہ خواجہ آصف فوری طوراپنا بیان واپس لیکر اپنے کردار کی درستگی کرے۔ وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ خیبرپختونخوا کے عوام خوف خدا رکھتے ہیں وہ اپنے اوپر کسی کا حق رہنے نہیں دیتے۔ وہ بلو ں کی ادائیگی اور زکوۃ کی ادائیگی سمیت دوسرے حقوق کی ادائیگی میں کبھی کوتاہی نہیں کرتے ۔انہوں نے کہا کہ پشتون قوم کنڈے اوربجلی چوری کرکے بجلی کا استعمال حرام تصور کرتے ہیں کیونکہ اس سے پھر عبادت میں خلل پڑے گی۔ وزیر خزانہ نے کہا کہ خیبر پختونخوا میں بسنے والے عوام حلال خور ہیں اور وہ کسی بھی صورت ،خاص کر رمضان المبارک میں بجلی چوری نہیں کرتے۔ اس لئے الزام تراشی بند کرکے اداروں کے دائرہ کار کو اپنی ذاتی جاگیر نہ سمجھے۔خیبر پختونخوا میں بڑے منصوبو ں کا ذکر کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ موجودہ صوبائی حکومت نے پشاور کی بیوٹی فیکیشن، ریپڈ بس سروس، ریلوے ٹریک، انڈسٹریل زون کے قیام اور ہرضلع میں ریسکیو1122 کے دفاتر کا قیام کے منصوبوں میں اہم کردار ادا کیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ خیبرپختونخوا کابجٹ ایک عوامی بجٹ ہوگا اوراس بجٹ میں عوام کو اضافی ٹیکسوں کی بوجھ سے دور رکھ کے ایک منصفانہ بجٹ پیش کیاجائیگا تاکہ عوام خوش رہیں اورہمارے صوبے میں معاملات صاف ،شفاف طریقے سے چلتے رہیں،۔

مزید :

کراچی صفحہ اول -