جہلم،سستا رمضان بازار کے ریٹ عام مارکیٹ سے بھی زیادہ نکلے

جہلم،سستا رمضان بازار کے ریٹ عام مارکیٹ سے بھی زیادہ نکلے

  

جہلم( نامہ نگار)خادم اعلی ٰ پنجاب کا رمضان بازار لگا کر عوام کو کم قیمت اشیاء فراہم کرنے کا خواب پورا نہ ہو سکا۔تفصیلات کے مطابق جہلم شہر میں رمضان بازار اور سستا رمضان بازار کے اندرسیب مارکیٹ میں 220 روپے کلوجبکہ رمضان بازار میں250روپے کلو اسی طرح کیلا مارکیٹ میں150/250روپے درجن جبکہ رمضان بازار میں/125 195روپے درجن کیونکہ مرکزی انجمن تاجران کی طرف سے کوئی ایسا اقدام نہ کیا گیا ہے کہ تاجر اس ماہ مقدس میں اپنا مثبت کردار ادا کر سکیں۔کیونکہ صدر کریانہ ایسوسی ایشن کی طرف سے ایک کریانہ کا سٹال لگایا گیا اسی طرح چیئرمین مارلیٹ کمیٹی نے سبزی اور فروٹ کا سٹال لگایا ہے جبکہ دونوں رمضان بازاروں میں اتنے سٹال نہیں ہیں جتنے سرکاری ملازم ہیں اس لئے خادم اعلی پنجاب ایسے احکامات جاری کریں کہ رمضان بازاروں میں بلاوجہ اخراجات کرنے اور سبسڈی دینے کی بجائے تمام تاجروں کو بحیثیت مسلمان اس مقدس ماہ کے احترام کے لئے یونین کونسل کی سطح پر قائل کیا جائے۔تاکہ رمضان بازار میں عوام کو درپیش مسائل کون حل کرے گا کیونکہ تمام افیسر اور عملہ رمضان بازاروں میں بیٹھا رہے گا۔اور عوام انپے جائز کام کروانے کے لئے دفتروں میں خوار ہوتے رہیں گے رمضان بازار میں ایک سروے کے دوران حضرت مولانا قاری عبد الودود خان ،حافظ محمد عثمان،چوہدری علی محمد،کنیز فاطمہ ،نے بتایا کہ ایک تو رمضان بازار میں سبزی اور فروٹ مارکیٹ سے مہنگے ہیں کیونکہ صرف چینی 50روپے کلو دے کر حکومت عوام پر احسان کر رہی ہے۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -