جدید تحقیق نے غیر مستند ڈاکٹرکے لیے مشکلا ت بڑھادی ہیں ،حنیف سعید

جدید تحقیق نے غیر مستند ڈاکٹرکے لیے مشکلا ت بڑھادی ہیں ،حنیف سعید

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر )معروف کاسموٹولوجسٹ اور ہیئر ٹرانسپلانٹ سرجن ڈاکٹرحنیف سعید نے کہا ہے کہ جدید طبی تحقیق نے غیر مستند ڈاکٹرز یا اتائیوں کے لیے مشکلا ت بڑھادی ہیں اور عام لوگوں کے لیے آرگینک یا نباتاتی دواؤں کا استعمال آسان بنادیاہے کیونکہ اب جڑی بوٹیوں سے یا ہربل طریقہ علاج بھی جدیدسائنٹیفک طبی اصولوں کی بنیاد پر کیا جارہاہے اب نامیاتی دواؤں کی مقدارکا بھی تعین کردیا گیاہے جدید تحقیق میں اٹکل اور اندازوں کی بنیاد پر ہربل وٹامنز کا بے محابہ استعمال بھی ناپسندیدہ قراردیا گیاہے یہ باتیں انہوں نے ایشین ہئیر ریسرچ انسٹی ٹیوٹ آف پاکستان کے زیراہتمام مرکزی دفتر واقع بہادر آباد میں منعقدہ سہ ماہی لیکچر کے سلسلے میں رمضان اور ہم کے عنوان سے خطاب کر تے ہوئے کہیں ۔ انہوں نے اس موقع پر حاضرین کے سوالوں کے جواب بھی دئیے۔ انہوں نے کہاکہ جدید طبی تحقیق کے بعد جڑی بوٹیوں سے علاج کے نام پر بعض اتائی یا ہربلسٹ سادہ لوح عوام سے پیسے نہیں بٹور سکیں گے کیونکہ جدید تحقیق کو عام بھی کیا جارہاہے ۔انہوں نے کہاکہ رمضان کے مہینے میں ہمارے یہاں مرغن کھانوں کا تصور ہے سموسے پکوڑے جلیبی اورمختلف قسم کے رول جیب پر بھاری ہوتے ہیں اور معدے پر بھی جبکہ رمضان کے فیوض برکات کے حصول میں بھی رکاوٹ بنتے ہیں کیونکہ مرغن کھانوں کے نتیجے میں گیس تیزابیت اور بوجھل طبیعت عبادات کی ادائیگی میں بھی مسائل پیدا کرتی ہے انہوں نے کہاکہ مرغن غذاؤں کا استعمال بھی طاقت کے لیے جڑی بوٹیوں کے بے تحاشا استعمال کے مترادف ہے ان دونوں کا کوئی فائدہ نہیں ہوتا ڈاکٹر حنیف سعید نے کہاکہ روزے کا مذہبی تصور جسم کی زکوٰۃ ہے تو پھر اس کی روح کے مطا بق ر مضان میں سادہ اور طاقتور غذائیں کھائی جائیں کھجور پھل سبزیاں ابلے چنے اس کے لیے بہترین ہیں ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہاکہ روزے کے نتیجے میں جسم سے ڈھائی فیصد فاسد مواد نکالنے کا تصور ذہن میں رکھاجائے تو مسئلہ ہی حل ہوجائے ڈھائی فیصد نائٹروجنی مادے،ڈھائی فیصد یورک ایسڈ ،ڈھائی فیصد شوگر ڈھائی فیصد چربی وغیرہ نکالنے سے جسم کی زکوۃ نکالی جاسکتی ہے جبکہ مرغن کھانے فاسد مواو میں اضافہ کر تے ہیں انہوں نے کہاکہ افطار کے بعد سے سحری تک اتنا پانی پی لیا جائے جتنا عام دنوں میں پیا جاتاہے تو جسم کی ضرورت پوری ہوجاتی ہے اور جلد پر اس کے اثرات نہیں پڑتے انہوں نے بتایاکہ رمضان مختلف نسخے آزمانے سے بہتر ہے سادہ غذائیں پھل اور سبزیوں پر توجہ دی جائے ڈاکٹر حنیف سعید نے بتایاکہ حال ہی میں متحدہ عرب امارات میں منعقدہ بیوٹی ورلڈ کنونشن دوہزار سترہ میں پاکستان سمیت دنیا بھر سے ماہرین نے شرکت کی جہاں جدید اور مستند طبی تحقیق کی روشنی میں تیار کردہ ہربل پرڈوکٹس متعارف کرائی گئیں ان کا کہناتھاکہ پاکستان میں ملٹی وٹامن کے استعمال کرنے کا رجحان عام ہے اور مستند ڈاکٹرز بھی ملٹی وٹامن کے استعمال پر کوئی اعتراض نہیں کرتے مگر اب ایسی جدید ہربل وٹامن دواؤں کے استعمال کا رجحان پروان چڑھ رہاہے جو سنگل وٹامن پر مشتمل ہیں اور ان کی مقدار کا تعین بھی آسان ہے ۔۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -