تنخواہوں میں 10 فیصد اضافہ آٹے میں نمک برابر ہے‘ فیڈرل ریونیو الائنس

تنخواہوں میں 10 فیصد اضافہ آٹے میں نمک برابر ہے‘ فیڈرل ریونیو الائنس

  

ملتان ( نیوز رپورٹر ) فیڈرل ریونیو الائنس ایمپلائز یونین کے عہدیداروں نے وفاقی بجٹ کو مایوس کن بجٹ قرار دیتے ہوئے کہا کہ حکومت نے ایک ہاتھ سے ملازمین کی تنخواہوں میں 10فیصد اضافہ کر کے دوسرے ہاتھ سے لیبر ٹیکس عائد کر کے اضافہ واپس لے لیا ہے ‘ یونین کے عہدیداران(بقیہ نمبر8صفحہ12پر )

صدر نوید اعوان ‘ سیکرٹری جنرل ارشد خان ترین ‘ کنور لیاقت علی ‘ چوہدری محمد اشرف لیگل ایڈوائزر ‘ اشفاق بلوچ اور راؤ عرفان نے کہا کہ حکومت کی جانب سے صرف یہی ریلیف دیا گیا ہے کہ ایڈہاک اضافے کو بنیادی تنخواہ میں شامل کردیا گیا ہے جبکہ 10 فیصد اضافہ آٹے میں نمک کے برابر ہے ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی جانب سے 10 فیصد تنخواہوں میں اضافے کا آغاز اگست میں ہوتا ہے لیکن بجٹ انارلوں ہونے کے ساتھ ہی مہنگائی کا طوفان برپا ہوگیا ہے ۔ سریا اور سیمنٹ کی قیمتوں میں اضافہ کرکے حکومت نے غریبوں کو چھت سے محروم کرنے کی منصوبہ بندی کرلی ہے جبکہ ذاتی کاروبار ‘پولٹری فارم کی مشینری کی درآمد سے ڈیوٹی ختم کر کے ثابت کر دیا ہے کہ حکمرانوں کو عوام کی بجائے صرف ذاتی مفادات سے غرض ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ مالی سال 2014-15 میں ضرب عضب کے دوران لیبر ٹیکس کا ان افراد پر نفاذ کیا گیا جن کا ٹرن اوور 500 ملن یا اس سے زیادہ تھا ‘ اب حکومت نے وہی لیبر ٹیکس ملازمین پر بھی عائد کردیا ہے ۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -