’ذرا دھیان سے رہو کہیں ایسا نہ ہو کہ۔۔۔‘ چین نے بھارت کو وارننگ دے دی، کیا کہا؟ جان کر مودی کو پسینے آجائیں گے

’ذرا دھیان سے رہو کہیں ایسا نہ ہو کہ۔۔۔‘ چین نے بھارت کو وارننگ دے دی، کیا ...
’ذرا دھیان سے رہو کہیں ایسا نہ ہو کہ۔۔۔‘ چین نے بھارت کو وارننگ دے دی، کیا کہا؟ جان کر مودی کو پسینے آجائیں گے

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) بھارت نے کشمیر کی طرح چین کے خطے تبت کے ایک حصے پر بھی قبضہ جما رکھا ہے اور اس حصے کو اروناچل پردیش کے نام سے اپنی ریاست بنا رکھا ہے۔ گزشتہ دنوں بھارتی وزیراعظم نریندر مودی نے اروناچل کو ریاست آسام سے منسلک کرنے کے لیے ایک پل تعمیر کرنے کا اعلان کیا جس پر چین کی طرف سے ایسی دھمکی دے دی گئی ہے بھارتیوں کی نیندیں اڑ گئیں۔ ڈان ڈاٹ کام کی رپورٹ کے مطابق پل کی تعمیر کے اعلان پر چین کی طرف سے بھارت کو متنبہ کیا گیا ہے کہ ”محتاط رہو اور اروناچل پردیش میں کسی بھی طرح کا انفراسٹرکچر تعمیر کرنے پر پابندی پر کاربند رہو۔“

’ سلمان عابدی نے مانچسٹر حملہ اس لئے کیا کیونکہ سکول میں جب وہ لڑکیوں سے بات کرتا تھا تو وہ۔۔۔ ‘ حملہ آور کے ہم جماعت نے انتہائی شرمناک بات کہہ دی جان کر آپ بھی حیران پریشان رہ جائیں گے

رپورٹ کے مطابق چینی وزارت خارجہ کی طرف سے جاری بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ ”مشرقی بارڈر پر واقع اپنے علاقوں کے متعلق چین کی پوزیشن واضح ہے۔امید ہے بھارت متنازعہ علاقوں کے حوالے سے معاہدوں کی پاسداری کرے گا اور ان کے مستقل حل تک انتہائی محتاط رویہ اختیار کرے گا۔“ واضح رہے کہ نریندرمودی نے جس پل کی تعمیر کا اعلان کیا یہ دریائے برہماپترا پر تعمیر ہونا ہے اور اگر یہ تعمیر ہو جاتا ہے تو بھارت کا سب سے بڑا پل ہو گا۔ اس پل کی لمبائی 9.2کلومیٹر ہو گی جس کی تعمیر سے ریاست آسام اور اروناچل کے درمیان سفر165کلومیٹر کم ہو جائے گا اور 5گھنٹے وقت کی بچت ہو گی۔

مزید :

بین الاقوامی -