جے آئی ٹی نے وزیر اعظم کے صاحبزادے کواڑھائی گھنٹے انتظار کرایا، 4گھنٹے تک پوچھ گچھ کی، حسین نواز سے مزید تفصیلات طلب: نجی ٹی وی کا دعویٰ

جے آئی ٹی نے وزیر اعظم کے صاحبزادے کواڑھائی گھنٹے انتظار کرایا، 4گھنٹے تک ...
جے آئی ٹی نے وزیر اعظم کے صاحبزادے کواڑھائی گھنٹے انتظار کرایا، 4گھنٹے تک پوچھ گچھ کی، حسین نواز سے مزید تفصیلات طلب: نجی ٹی وی کا دعویٰ

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) پانامہ کیس کی تفتیش کے لئے قائم مشترکہ تحقیقاتی ٹیم نے وزیر اعظم پاکستان کے صاحبزادے حسین نواز کو کو اڑھائی گھنٹے تک انتظار کرایا گیا، جبکہ حسین نواز نے کم و بیش 4 گھنٹے تک جے آئی ٹی کے سوالوں کے جواب دئیے۔

روزے کی حالت میں 6گھنٹے تک سوالات کے جواب دئیے، کسی کا رویہ ٹھیک نہیں ہوگا تو وہ امید نہ رکھیں کہ عدالت نہیں جاﺅں گا: حسین نواز

نجی ٹی وی چینل جیو نیوز نے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ پانامہ کیس کی تفتیش کے لئے قائم مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کے سامنے پیش ہونے کے لئے وزیر اعظم پاکستان کے صاحبزادے حسین نواز 11بج کر 5منٹ پرجوڈیشل اکیڈمی کے باہر موجود تھے۔ حسین نوازجب پہنچے توبتایاگیاسعیداحمد کا بیان لیاجارہاہے۔ جے آئی ٹی نے صدرنیشنل بینک سعیداحمد  سے ڈھائی گھنٹے پوچھ گچھ کی۔ حسین نوازڈھائی گھنٹے تک سعیداحمد سے تفتیش ختم ہونے کانتظارکرتے رہے، حسین نوازکوڈھائی گھنٹے بعد جے آئی ٹی نے کمرے میں طلب کیا،حسین نواز سے پوچھ گچھ کا عمل ڈیڑھ بجے کے قریب شروع ہوااور  پوچھ گچھ کاعمل ساڑھے 5بجے تک جاری رہا۔ حسین نوازنے کم وبیش4گھنٹے  سے زیادہ تک جے آئی ٹی کے سوالوں کا جواب دیا۔وزیر اعظم کے صاحبزادے حسین نواز نے اپنی منقولہ اور غیر منقولہ جائیداد کی تفصیلات دیں جبکہ جے آئی ٹی نے حسین نواز سے مزید تفصیلات طلب کرلیں ہیں۔

مزید :

قومی -