شہر قائد کے باسیوں کا ایک اور افطار بجلی کے بغیر گذر گیا، ہوا میں نمی کے باعث لوڈ شیدنگ ہو رہی ہے: ترجمان کے الیکٹرک

شہر قائد کے باسیوں کا ایک اور افطار بجلی کے بغیر گذر گیا، ہوا میں نمی کے باعث ...
شہر قائد کے باسیوں کا ایک اور افطار بجلی کے بغیر گذر گیا، ہوا میں نمی کے باعث لوڈ شیدنگ ہو رہی ہے: ترجمان کے الیکٹرک

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن) شہر قائد کے باسیوں کا آج کا افطار بھی بجلی کے بغیر گزر گیا، کراچی میں بجلی کی آنکھ مچولی پھر شروع ہوگئی،لیاقت آباد، فیڈرل بی ایریا، لائنز ایریا اور جیکب لائن کے علاقے تاریکی میں ڈوب گئے۔ترجمان کے الیکٹرک کے مطابق ہوا میں نمی کے باعث لوڈ شیڈنگ کرنا پڑ رہی ہے۔

کے الیکٹرک کو قومی تحویل میں لیا جائے ، اذیت ناک لوڈشیڈنگ کے خلاف جمعہ کو یوم سیاہ منائیں گے: حافظ نعیم الرحمان

تفصیلات کے مطابق کراچی کے شہریوں کے لئے سحر اور افطار کے اوقات شدید تنگی میں گزر رہے ہیں، لوڈ شیڈنگ کے باعث شہریوں کے لئے افطاری اور سحری کرنا مشکل ہوتا جا رہا ہے، تیسری سحری کے دوران بھی کراچی کے اکثر علاقوں میں بجلی غائب رہی،شدید گرمی میں رمضان کے تیسرے اور ایک مہینے کے بارہویں بڑے بریک ڈاﺅن پر شہریوں کے صبر کا پیمانہ لبریز ہوگیااور وہ احتجاج کرتے ہوئے سڑکوں پر نکل آئے۔غریب آباد میں لوڈ شیڈنگ کے خلاف احتجاج کے دوران مظاہرین نے ٹائروں کو آگ لگادی، ٹریفک بلاک کردیا۔پولیس نے مظاہرین کو روکنے کی کوشش کی تو پولیس پر بھی پتھراﺅ کردیاجبکہ پولیس کی جانب سے ہوائی فائرنگ کی گئی اورکئی افراد کو حراست میں لے لیا گیا۔مشتعل افراد نے ناظم آباد میں کے الیکٹرک کا دفتر جلانے کی کوشش کی ، لیاقت آباد، ملیر اور شاہ فیصل کالونی میں جلاﺅگھیراﺅاور پتھراﺅکرکے سڑکیں بند کئے رکھیں۔جبکہ کے الیکٹرک نے اپنی زیادتیوں کا سارا ملبہ ہوا میں موجود نمی پر ڈالتے ہوئے کہا کہ نمی کے باعث ہمارے فیڈرز ٹرپ کر رہے ہیں اور لوڈشیڈنگ کرنا پڑ رہی ہے۔

مزید :

کراچی -