وکیل کے گھر ڈکیتی اور اقدام قتل کیس میں 4مجرموں کوقید وجرمانے کی سزا

وکیل کے گھر ڈکیتی اور اقدام قتل کیس میں 4مجرموں کوقید وجرمانے کی سزا

  

لاہور(نامہ نگار )ماڈل ٹاؤن کچہری کی عدالت نے وکیل کے گھر ڈکیتی ، مزاحمت اور اقدام قتل کیس میں دو خواتین سمیت 4مجرموں کوقید وجرمانے کی سزاکا حکم سنا دیا ہے ۔جوڈیشل مجسٹریٹ رانا راشد نے مجرموں مزمل اختر اور حیدر علی کاشف کو 7،7سال قید اور 50،50ہزار روپے جرمانہ جبکہ مجرمہ صائمہ بی بی اور فاطمہ بی بی کو4،4سال قید اور 50،50ہزار روپے جرمانے کی سزا کا حکم سنا دیا ہے ۔ملزموں کے خلاف تھانہ نواب ٹاؤن میں 6 مختلف دفعات کے تحت اقدام قتل ، لڑائی جھگڑے اور ڈکیتی کا مقدمہ درج تھا۔ ملزموں کے خلاف آذر لطیف کی مدعیت میں تھانہ نواب ٹاؤن میں 5 سال قبل مقدمہ درج کیا گیاتھا۔پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا کہ ملزموں نے آذر لطیف کے گھر میں ڈکیتی کی،سی دوران لڑائی جھگڑا ہوا اور ملزموں کی فائرنگ سے مدعی کے گھر کے افراد زخمی ہو گئے تھے۔عدالت نے وکلاء کے دلائل سننے کے بعد مذکورہ بالا حکم جاری کردیا ہے۔

مزید :

علاقائی -