پولیس تشدد سے مسیحی نوجوان کی مبینہ ہلاکت ، ورثا کا احتجاجی مظاہرہ

پولیس تشدد سے مسیحی نوجوان کی مبینہ ہلاکت ، ورثا کا احتجاجی مظاہرہ

  

گجرات(بیورورپورٹ)تھانہ سول لائن پولیس اہلکاروں کے ہاتھوں حیدر کالونی میں یتیم مسیحی نوجوان کی مبینہ طور پر ہلاکت کے بعد مقتول کے ورثا کی طرف سے سڑک بند کر کے زبردست احتجاجی مظاہرہ کیا گیا واقعہ کی اطلاع ملتے ہی ڈی ایس پی سٹی حافظ امتیاز ‘ ایس ایچ او سول لائن عدنان شہزاد بھاری نفری کے ہمراہ موقع پر پہنچ گئے۔ تفصیل کے مطابق تھانہ سول لائن پولیس کے اہلکاروں نے حیدر کالونی کے رہائشی وقاص مسیحی نامی نوجوان کی گرفتاری کیلئے اسکے گھر چھاپہ مارا اس دوران اسے بدترین تشدد کا نشانہ بنایا گیا جس سے اسکی موت ہو گئی ورثا نے سڑک بند کر کے پولیس کے خلاف شدید نعرے بازی کی اور ذمہ داروں کیخلاف مقدمہ درج کرنیکا مطالبہ کیا مقتول کی نعش پوسٹ مارٹم کے لیے عزیز بھٹی شہید ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے تھے مقتول وقاص رورل ہیلتھ سنٹر ٹانڈہ میں بطور مالی کام کرتا اور والدین کا اکلوتا بیٹا تھا جس کا والد وفات پا چکا ہے اطلاعات کے مطابق واقعہ کا مقدمہ درج کرانے کیلئے سول لائن پولیس کو درخواست دیدی گئی ہے جبکہ آئی جی پنجاب اور آر پی اوگوجرانوالہ کی طرف سے واقعہ کی رپورٹ طلب کرلی گئی ہے ۔

مزید :

علاقائی -