طاہرالقادری کی 3 جون کو واپسی،ہزاروں کے ہمراہ اعتکاف بیٹھیں گے

طاہرالقادری کی 3 جون کو واپسی،ہزاروں کے ہمراہ اعتکاف بیٹھیں گے

  

لاہور(ایجوکیشن رپورٹر)تحریک منہاج القرآن کے بانی و سرپرست پاکستان عوامی تحریک کے سربراہ ڈاکٹر محمد طاہرالقادری 3 جون کو وطن پہنچیں گے، ڈاکٹر طاہرالقادری ہزاروں افراد کے ہمراہ اعتکاف بیٹھیں گے، امسال شہر اعتکاف میں ان کے خطابات کا موضوع ’’مثنوی مولانا رومؒ ‘‘ ہو گا، شہر اعتکاف کی خصوصی طور پر تزئین و آرائش کی گئی ہے اور متعکفین کی سکیورٹی اور سہولت کیلئے بجلی، صاف پانی کی بلاتعطل فراہمی کیلئے خصوصی انتظامات کیے گئے ہیں، خواتین اور مرد حضرات کی طرف سے بڑی تعداد میں رجسٹریشن ہو چکی ہے، معتکفین کی سہولت اور آرام کیلئے 51 کمیٹیاں تشکیل دی گئی ہیں، مرکزی کمیٹی کے سربراہ خرم نوازگنڈاپور، نائب سربراہ بریگیڈیئر(ر) اقبال احمد اور شہر اعتکاف کی مرکزی کمیٹی کے سیکرٹری جواد حامد ہیں جبکہ دیگر نائب سربراہان میں انجینئر محمدرفیق نجم، جی ایم ملک، احمد نواز انجم، علامہ رانا محمد ادریس، سردار شاکر مزاری شامل ہیں جبکہ ذیشان بیگ، سیف اللہ بھٹی، سعیداختر، میاں زاہد جاوید، ڈپٹی سیکرٹری ہوں گے۔علاوہ ازیں ڈاکٹر محمد طاہرالقادری کینیڈا سے ترکی پہنچ گئے ہیں۔وہ شہر قونیہ میں قیام پذیر ہیں جہاں انہوں نے مولانا رومؒ کے مزار پر حاضری دی۔ ڈاکٹر طاہرالقادری 3 جون کی صبح علامہ اقبال انٹرنیشنل ایئرپورٹ لاہور اتریں گے جہاں کارکنان ان کا ایئرپورٹ پر استقبال کریں گے۔ دریں اثناء سربراہ عوامی تحریک نے ٹیلیفون پر سینئر رہنماؤں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جب تک موجودہ نظام ہے اس وقت تک سو فیصد فیئر اینڈ فری الیکشن کی توقع نہیں کی جاسکتی، ایک ایماندار نگران وزیراعظم اور چار ایماندار نگران وزرائے اعلیٰ اس وقت تک کچھ نہیں کر سکیں گے جب تک سسٹم کو شفاف نہیں بنایا جاتا۔ جب سسٹم ہی ایماندار نہ ہو تو وہاں نگران ایماندار کیا کر سکتے ہیں۔ ماضی میں جتنے بھی نگران وزرائے اعظم آئے ان کی اہلیت پر اور ان کی ایمانداری پر کوئی سوال نہیں اٹھا تھا لیکن فیئر اینڈ فری الیکشن کا تحفہ قوم کو نہ مل سکا۔

طاہرالقادری

مزید :

صفحہ آخر -