کرپشن میں ملوث پولیس افسروں اور اہلکاروں کیخلاف کارروائی کا آغاز

کرپشن میں ملوث پولیس افسروں اور اہلکاروں کیخلاف کارروائی کا آغاز

  

لا ہور(رپورٹ: یو نس با ٹھ )صوبہ بھرکے سرکاری محکموں میں تعینات ایسے تمام افسروں اور اہلکاروں کو فیلڈ ڈیوٹی سے فوری طور پر ہٹانے کا فیصلہ کیا گیا ہے جن کیخلاف گزشتہ چند سالوں کے دوران اینٹی کرپشن اور مختلف تھانوں میں مختلف الزامات کے تحت مقدمات درج ہوئے ہیں لا ہور پولیس نے گزشتہ 5سا لوں کے دورا ن ڈی آئی جی ،ایس ایس پی، ایس پی ،اے ایس پی ، ڈی ایس پی اور انسپکٹر سمیت 1200سے زائد پولیس افران و اہلکاروں کیخلاف قتل‘ خیانت مجرمانہ‘ اغوا فا ئر نگ ا ور دوسرے سنگین جرائم کے الزام میں مقد ما ت کا اندراج کیا ہے ۔مگر افسو س نا ک امر یہ ہے کہ ان میں سے ایک بھی پو لیس افسر یا اہلکار کا چا لا ن نہ ہو سکا ۔ 171مقد ما ت کا اندرا ج کیا گیا ۔مقدمات درج ہونے کے باوجود کئی با اثر افسران اور اہلکار اب بھی مختلف تھانوں میں اپنی ڈیوٹی سر انجام دے رہے ہیں۔ ا نوسٹی گیشن ونگ نے147مقدمات کے چالان مکمل کر کئے جبکہ31نا مکمل مقدمات کے چالان عدالتوں میں پیش کئے جبکہ113مقدمات اب بھی زیر تفتیش ہیں۔تفتیشی افسران نے315مقدمات خارج جبکہ44مقدمات کو ان ٹریس قرار دیکر داخل دفتر کر دیا۔تفصیلات کے مطابق لا ہور سٹی پولیس نے گزشتہ پا نچ سا لو ں کے دوران جن پولیس افسران کیخلاف مقدمات درج کئے ان میں چار اے ایس پی‘ 6 ڈی ایس ‘ پی‘30انسپکٹر‘117سب انسپکٹر‘210اے ایس آئی‘216ہیڈ کانسٹیبل‘548کانسٹیبلز‘43ٹریفک وارڈنز اور 6 کانسٹیبل شامل ہے۔سٹی ڈویژن میں ایسے152‘ کینٹ ڈویژن میں110‘ اقبال ڈویژن میں85‘ صدر ڈویژن میں78‘ ماڈل ٹاؤن ڈویژن میں59 اور سول لائن ڈویژن میں ایسے74مقدمات درج ہوئے۔انوسٹی گیشن ونگ نے171مقدمات کے چالان مکمل کر کئے جبکہ31نا مکمل مقدمات کے چالان عدالتوں میں پیش کئے جبکہ113مقدمات اب بھی زیر تفتیش ہیں۔اس سلسلہ میں حیران کن امر یہ ہے کہ مقدمات درج ہونے کے باوجود کئی با اثر افسران اور اہلکار اب بھی مختلف تھانوں میں اپنی ڈیوٹی سر انجام دے رہے ہیں جبکہ کئی نے اپنے اثررسوخ کی بنیاد پر اپنے مدعیؤں سے صلح کر لی ہے ۔ یہ بھی معلو م ہو ا کہ پنجاب حکومت کے خاتمے کے ساتھ ہی کرپشن میں ملوث سرکاری افسروں اور اہلکاروں کیخلاف کارروائی کا آغاز کیا جا رہا ہے ۔محکمہ سروسز اینڈ جنرل ایڈمنسٹریشن ڈیپارٹمنٹ میں ہونے والے ایک اعلیٰ سطحی اجلاس میں صوبہ بھرمیں تمام سرکاری محکموں میں تعینات ایسے تمام افسروں اور اہلکاروں کو فیلڈ ڈیوٹی سے فوری طور پر ہٹانے کا فیصلہ کیا گیا ہے جن کیخلاف گزشتہ چند سالوں کے دوران اینٹی کرپشن اور مختلف تھانوں میں مختلف الزامات کے تحت مقدمات درج ہوئے ہیں۔ وا ضح رہے سا بق ڈ ی آئی جی را نا عبد الجبا ر ۔ سکیو رٹی ایس ایس پی سلما ن خا ن ۔ایس ایس پی لیگل طا ر ق عز یز ،ڈی ایس پی آفتا ب پھلروان ،انسپکٹر عا مر سلیم شیخ سمیت متعدد افسران و اہلکاران سا نحہ ما ڈ ل ٹاؤن میں ملزما ن قرار پا ئے گئے ان میں سے صر ف انسپکٹر عا مر سلیم شیخ گرفتا ر ہوا با قی مقدمہ درج ہو نے کے با وجو د انھیں گر فتا ر نہیں کیا جا سکا ۔

مزید :

صفحہ آخر -