پی پی 57گوجرانوالہ : مسلم لیگ ن اور پی ٹی آئی امیدوار باہمی اختلافات کا شکار

پی پی 57گوجرانوالہ : مسلم لیگ ن اور پی ٹی آئی امیدوار باہمی اختلافات کا شکار

  

گوجرانوالہ (شبیر حسین مغل سے ) انتخابات سے قبل گوجرانوالہ شہر کے حلقہ پی پی 57میں مسلم لیگ ن اور تحریک انصاف کے امیدوار باہمی اختلافات کا شکار ہو کر رہ گئے ہیں نئی حلقہ بندیوں کے بعد اس حلقہ سے بیشتر نئے چہرے قسمت آزمائی کیلئے تیار ہو چکے ہیں مسلم لیگ ن کے موجودہ ایم پی اے سمیت چار یوسی چیئرمین جبکہ تحریک انصاف کے 12امیدواران قسمت آزمائی کیلئے میدان میں ہیں جبکہ پیپلز پارٹی کی طرف سے صغیر بٹ امید وار ہونگے تاہم جماعت اسلامی کی طرف سے مشتاق ابراہیم امیدوار ہیں لیکن مسلم لیگ ق کا کوئی امیدوار نہیں نئی حلقہ بندیوں کے باعث پی پی 57شہر کے مختلف علاقوں پر مشتمل نیا حلقہ بن کر سامنے آیا ہے جس کے باعث اس حلقہ سے نئے چہرے حصہ لے رہے ہیں تحریک انصاف کی جانب سے چوہدری شبیر مہر ، اکرام انصاری ، سابق ناظم میاں عتیق الرحمان ، اعظم بھٹہ ، سابق سٹی صدر عقیل ڈار ، حافظ عتیق احمد سمیت 12امیدواران نے پارٹی ٹکٹوں کیلئے درخواستیں جمع کروا کر انٹر ویو بھی دیا جبکہ مسلم لیگ ن اشرف علی انصاری ، کامران خالد بٹ ، یوسی چیئرمینز صدیق بٹ ، عامر اکرام بٹ ، نور محمد مرزا سمیت دیگر امیدواران سامنے آچکے ہیں پیپلز پارٹی کے سٹی سیکرٹری اطلاعات صغیر بٹ بھی اس حلقہ سے الیکشن کا اعلان کر چکے ہیں حلقہ پی پی 57میں شامل ہونے والے علاقے باغبانپورہ ، گرجاکھ ، نوشہرہ روڈ چوک ، گورنانک پورہ ، شاہین آباد ، شمع کالونی ، شفیق کالونی ، دھلے کا کچھ حصہ ، ماڈل ٹاؤن ، حافظ آباد ، ڈی سی روڈ ، سول لائن ، محلہ اسلام آباد ، محلہ بختے والا ، جناح روڈ ودیگر علاقے شامل ہیں یہاں دلچسپ بات یہ ہے کہ حلقہ پی پی 57میں کشمیری، آرائیں ، انصاری ، مغل اور شیخ برادری کی اکثریت ہے مگر حلقہ کی 6یونین کونسلوں کے یوسی چیئرمینز کا تعلق کمشیر ی برادری اور مسلم لیگ ن سے ہے مگر یہاں خدشہ یہ بھی ہے بعض یوسی چیئرمینز نے اعلان کیا ہے کہ اگر مسلم لیگ ن نے ٹکٹ نہ دیا تو آزاد حیثیت سے الیکشن میں حصہ لیں گے جس کا مسلم لیگ ن کے امیدوار کو نقصان پہنچ سکتا ہے اس کے علاوہ ڈسٹرکٹ بار کے صدر نور محمد مرزا بھی امیدوار ہیں جنہوں نے مسلم لیگ (ن)نے کی ٹکٹ کیلئے اعلیٰ قیادت سے رابطے تیز کر دیئے ہیں اور انہیں مغل برادری کی حمایت بھی حاصل ہے تحریک انصاف کی قیادت نے چند امیدواروں کے نام شارٹ لسٹ کر رکھے ہیں جن مین سابق ایم پی اے چوہدری شبیر مہر ، اکرم انصاری ، میاں عتیق الرحمان ، عقیل ڈار کے نام ہیں تاہم آرائیں برادری کی سرکردہ شخصیات اور بلدیاتی نمائندوں کی اکثریت نے چوہدری شبیر مہر کی حمایت کرکے باقاعدہ انتخابی مہم شروع کر دی ہے اس کے علاوہ اکرم انصاری سابق ڈپٹی میئر حاجی عارف کے قریبی رشتہ دار بھی ہیں جنہیں قومی اسمبلی کے امیدوار این اے 81اور سابق ایم پی اے ایس اے حمید کی حمایت بھی حاصل ہے کیونکہ اس حلقہ میں کشمیری اور شیخ برادری کا ووٹ بنک ہیں اور ایس اے حمید کی حمایت سے تین مرتبہ اسی حلقہ سے ایم پی اے بھی منتخب ہو چکے ہیں جن کا ساتھ کاروباری برادری بھی ہے تاہم چند روز میں مسلم لیگ نے اور پی ٹی آئی کی ٹکٹوں کا فیصلہ ہونے کا باقاعدی سیاسی منظر نامہ واضع ہو جائے گا۔

گوجرانوالہ/پی پی57

مزید :

صفحہ اول -