خیبرپختونخوا میں رواں سال بدقماش عناصر کیخلاف سرچ آپریشن،46110 مشتبہ گرفتار

خیبرپختونخوا میں رواں سال بدقماش عناصر کیخلاف سرچ آپریشن،46110 مشتبہ گرفتار

  

پشاور (کرائم رپورٹر) خیبر پختونخوا پولیس نے رواں سال صوبہ بھر میں جرائم پیشہ اور ملک دشمن عناصر کے خلاف جاری سرچ اینڈ اسٹرائیک آپریشن کے دوران مختلف کاروائیوں میں46110مشتبہ افراد کو گرفتار کرکے ان سے بھاری مقدار میں اسلحہ و ہتھیار برآمد کرلیا۔تفصیلات کے مطابق خیبر پختونخوا پولیس نے صوبہ بھر میں جرائم پیشہ افراد کے خلاف 6497 آپریشنز کئے۔جن میں 46110 مشتبہ افراد کو گرفتار کرکے ان کے قبضے سے 8610مختلف بور کا اسلحہ اور 183635 کارتوس برآمد کرلئے۔اس دوران 195927 گھروں کو چیک کیا گیااور کرایہ کے عمارتوں کے قانون کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف 6575 ایف آئی آر ز درج کئے۔ آپریشن کے دوران ضلع پشاور میں 72825 گھروں کو چیک کیا گیا۔ اور خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف 1720ایف آئی آرز کا اندراج کیا گیا۔اسی طرح مردان ریجن میں 35025 ، کوہاٹ ریجن میں 11904 ، بنوں ریجن میں 7390 ، ڈی آئی خان ریجن میں 21086 ، ملاکنڈ ریجن میں 16890 اور ہزارہ ریجن میں 30807 گھروں کو چیک کیا گیا۔ کرایہ کے عمارتوں کے قانون کی خلاف ورزی پر مردان میں 2084 ، کوہاٹ میں 259 ، بنوں میں 71، ڈی آئی خان میں 237 ، ملاکنڈ میں 1677 اور ہزار ہ ریجن میں 527 پرچے درج کئے گئے۔اسی طرح صوبہ بھر میں 47288 ہوٹلز چیک کئے گئے۔اور ہوٹلوں کے لیے پاس کردہ قانون کی تعمیل نہ کرنے والوں کے خلاف 670 ایف آئی آرز کا اندراج کیا گیا۔ صوبہ بھر میں 39762 مقامات پر اچانک چیکنگ کے دوران 69622 مشتبہ افراد کو حراست میں لے کر ان کے قبضے سے 5176عدد اسلحہ اور 89179کارتوس برآمد کیا گیا۔ اس کے علاوہ صوبے میں غیر قانونی طور پر مقیم 220 افغان باشندوں کو گرفتارکرکے خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف 180 عدد پرچے درج کئے گئے۔ اس دوران 174941 سکولز ،کالجز اور یونیورسٹیوں کو چیک کیا گیا اور مناسب سیکورٹی اقدامات نہ کرنے پر 66083 تعلیمی اداروں کو ضروری ہدایات جار ی کی گئیں۔ اور خلاف ورزی کرنے پر 584 عدد پرچے درج کئے گئے۔ لاؤڈ سپیکروں کے غلط استعمال پر 1605 پرچے درج کرکے 1657 لاؤڈ سپیکر تحویل میں لیکر1660افراد کو گرفتار کرکیا گیا۔اسی طرح صوبہ بھر میں 20402 بس اڈوں کو چیک کرکے 271 ایف آئی آرز کا اندراج کیا گیا۔اس کے علاوہ 808 سنیما گھروں کو چیک کرکے خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف 4 عددپرچے درج کئے گئے۔ جبکہ 90809 عدد حساس اور غیر محفوظ مقامات کو چیک کرکے مناسب سیکورٹی نہ کرنے پر 1622 پرچے درج کئے گئے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -رائے -