نہروں کی بندش جمشید دستی کی قیادت میں ترکش کالونی بائی پاس پر کسانوں کا دھرنا

نہروں کی بندش جمشید دستی کی قیادت میں ترکش کالونی بائی پاس پر کسانوں کا دھرنا
نہروں کی بندش جمشید دستی کی قیادت میں ترکش کالونی بائی پاس پر کسانوں کا دھرنا

  

مظفر گڑھ ‘ اڈالیاقت آباد ‘ مانک پور ‘ کلیم چوک ‘ چوک مکول (ویب ڈیسک) جنوبی پنجاب کی نہروں کی بندش کے خلاف جمشید احمددستی اور چودھری عامر کرامت کی قیادت میں سینکڑوں پاکستان عوامی راج پارٹی کے کارکنوں اور کسانوں نے ترکش کالونی بائی پاس دھرنا دیکر سڑک بند کردی جس سے ٹریفک کی لمبی لائنیں لگ گئیں۔ جمشید احمد دستی اور چوہدری عامر کرامت نے سینکڑوں کارکنوں کے ہمراہ گزشتہ شام 6بجے ترکش کالونی چوک کی ایک سائیدٹریفک کے لئے بند کردی تاہم روزہ افطار کرنے کے بعد ملتان لاہور ڈیرہ غازی خان سڑک کو ٹریفک کے لئے مکمل طور پر بند کردیا گیا اس موقع پر چودھری کے شرکاءسے خطاب کرتے ہوئے جمشید دستی نے کہا کہ ہمارا دماغ خراب نہیں ہے سخت گرمی میں ماہ مقدس میں روزے کی حالت سڑک پر بیٹھنے آگئے ہیں ہماری دھرنے کے پیچھے و سیب کے کسانوں کی تبا حال فصلیں اور پانی کی بوند کو ترستے کروڑوں انسان ہیں انہوں نے کہا مودی کے یار نواز شریف اور آصف زرداری جیسے غدار وطن سیاستدانوں کی وجہ سے پاکستان میں پانی کا کوئی بڑا منصوبہ نہیں بن سکا اور انہی سیاستدانوں کے علاقوں میں پورا نہری پانی دیا جارہا ہے جبکہ جنوبی پنجاب میں طویل عرصے سے نہریں بند ہیں انہوں نے کہا اسمبلیوں میں بیٹھے 90فیصد چورڈاکو سیاستدان عوام کے دشمن ہیں انہوں نے کہا اب ہم تخت لاہور کے مظالم سے تنگ آچکے ہیں اگر ڈیموں میں پانی کم ہے تو اپر پنجاب کی نہریں کس طرح اوور فلو چل رہی ہین انہوں نے کہا شہباز شریف نے صاف پانی پراجیکٹ میں اربوں روپے کی ڈرامے بازی کی جبکہ صورتحال یہ ہے کہ جنوبی پنجاب کی حالت تھر اور چولستان جیسی کردی گئی ہے نہروں میں پانی کی طویل بندش سے عوام پینے کے پانی کو بھی ترس گئے ہیں جبکہ اس سرائیکی و سیب کے بے ضمیر مالشیے سیاستدان تخت لاہور کی خوشنودی حاصل کرنے کے لئے سب اچھا کا گیت گاتے ہیں ۔ جب تک ہماری نہروں میں پانی نہیں آتا ہمارا احتجاج جاری رہے گا۔ انہوں نے کہاکہ انجینئر انہار کمشنر ڈیرہ غازی خان ‘ ایس ڈی اوانہار مظفر گڑھ کان کھول کر میری بات سن لیں جب تک جنوبی پنجاب مظفر گڑھ کی نہروں میں پانی نہیں چھوڑا جاتا اس وقت تک یہ دھرنا جاری رہے گا۔ اگر کل تک مظفر گڑھ کی نہروں میں پانی نہ چھوڑا گیا تو ہیڈ تونسہ بیراج کے درے زبردستی کھول دوں گا۔ دھرنے میں چودھری عامر کرامت‘ رانا امجد علی امجد ‘ ظفر اقبال گرمانی ، غلام شبیر ساغر ‘ مسرور قریشی ‘ اجمل چانڈیہ ‘ مہرناصر ترگڑ ‘ راﺅ مسعود علی خان ‘ ملک عابد ‘ قاضی نجم الحسن ‘ قاضی سرفراز حسین‘ رانا واجد علی ‘ عاصم سمیت کسانوں اور کاشتکاروں تنظیموں کے نمائندگان اور عوامی راج پارٹی کے کارکنوں اور عہدے داروں نے شرکت کی ۔ جمشید خان دستی نے چوک گدر پور کی سیاسی و سماجی شخصیت میاں مختار مکول اور میاں فیض فرید مکول کی طرف سے اپنے اعزاز میں دیئے گئے ظہرانے کے موقع پر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جاگیرداروں وڈیروں سیاستدانوں کا اقتدار نزاعی کیفیت میں ہے الیکشن 2018ءانکی ریاست کا بستر ہمیشہ کے لیے گول کر دیں گے۔

مزید : علاقائی /پنجاب /مظفرگڑھ /کسان پاکستان