پیشاب روک کر رکھنے کا ڈاکٹروں نے انتہائی خوفناک نقصان بتادیا

پیشاب روک کر رکھنے کا ڈاکٹروں نے انتہائی خوفناک نقصان بتادیا
پیشاب روک کر رکھنے کا ڈاکٹروں نے انتہائی خوفناک نقصان بتادیا

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) ایک تحقیق کے مطابق 43فیصد مردوخواتین پیشاب روکے رکھنے کی عادت میں مبتلا ہوتے ہیں اور وقت پر ٹوائلٹ نہیں جاتے۔ اب ڈاکٹروں نے ہماری اس عادت کا انتہائی خوفناک نقصان بھی بتا دیا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق ڈاکٹر نینا بروکمین اور ایلن سٹوکن نے اپنی نئی تصنیف میں بتایا ہے کہ پیشاب کو روکے رکھنا انتہائی خطرناک ہوتا ہے کیونکہ اس سے مردوخواتین کوورم مثانہ (Cystitis)نامی بیماری لاحق ہونے کا خطرہ کئی گنا بڑھ جاتا ہے جو انتہائی تکلیف دی اور مہلک عارضہ ہے۔

ان ماہرین نے اپنی کتاب میں مزید لکھا ہے کہ ”پیشاب روکے رکھنے سے خطرناک بیکٹیریا زیادہ دیر تک مثانے میں رہتے ہیں جس سے مثانے میں انفیکشن ہو جاتی ہے جو اگلے مرحلے میں مثانے کی سوزش کی شکل اختیار کرتے ہیں جو ورم مثانہ کا سبب بنتی ہے۔مردوں کی نسبت یہ بیماری خواتین کو زیادہ لاحق ہوتی ہیں کیونکہ ان کی مخصوص جسمانی ساخت کی وجہ سے ان میں مثانے کی انفیکشن ہونے کی وجوہات بھی زیادہ ہوتی ہیں۔پیشاب نہ آنے کے باوجود ایسا محسوس ہونا جیسے پیشاب آ رہا ہو، پیشاب گدلا اور گہرے رنگ کا ہونا اور اس سے بدبو آنا، پیڑو میں تکلیف ہونا، جسم میں تھکاوٹ رہنا اور متلی محسوس ہونااس بیماری کی علامات ہوتی ہیں۔‘

مزید :

ڈیلی بائیٹس -تعلیم و صحت -