پی آئی اے کا خصوصی طیارہ ملائیشیا میں پھنسے 320پاکستانی قیدی لے کر وطن واپس پہنچ گیا 

پی آئی اے کا خصوصی طیارہ ملائیشیا میں پھنسے 320پاکستانی قیدی لے کر وطن واپس ...

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک،این این آئی) وزیر اعظم عمران خان کی خصوصی ہدایت پر ملائیشیا میں پھنسے 320 پاکستانیوں کو وطن واپس لانے کیلئے پی آئی اے کا خصوصی طیارہ بدھ کی صبح ملائشیا پہنچا اورقیدیوں کو واپس لے کر پاکستان آیا۔یہ پاکستانی ملائشیا میں اپنی قید مکمل کر چکے تھے مگر ڈائریکٹ فلائیٹ کے تعطل کی وجہ سے پاکستان آنے سے قاصر تھے۔ وزارت خارجہ میں ان پاکستانیوں کی وطن واپسی کے لیے خصوصی سیل قائم کیا گیا۔اس سیل میں وزارت خارجہ،پی آئی اے اور بیت المال کے افسران شامل تھے،سیل نے ان پاکستانیوں کی فوری وطن واپسی کے لیے تمام انتظامات مکمل کئے، پی آئی اے کی جانب سے ٹویٹر پر جاری کر دہ پیغام میں کہا گیا ہے کہ ”ہمیں اپنے عملے پر فخر ہے جو کہ خصوصی پرواز لے کر ملائیشیاء گیا اور 300 سے زائد پاکستانیوں کو وطن واپس لے کر آیاہے، جو وہاں پر شدید مشکلات سے دوچار تھے۔معاون خصوصی برائے اوور سیز پاکستانی زلفی بخاری نے کہا ہے کہ ہمارا مقصد ملائیشیا کی جیلوں میں موجود قیدیوں کو واپس لانا ہے، قیدیوں کی رہائی میں پی آئی اے اور ایوی ایشن کا اہم کر دار رہا ہے۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ قیدیوں کی رہائی میں پی آئی اے اور ایوایشن  کا اہم کردار رہا ہے۔ انہوں نے کہاکہ پی ایم کے کہنے پر ایم ڈی بیت المال کی جانب سے تعاون کیا گیا، پہلی حکومتوں میں اس طرح اقدامات نہیں کئے جاتے تھے، پاکستان بیت المال کے ایم ڈی عون عباس پپی نے کہاکہ اہم مقصد یہ تھا کہ ملائشیا کی جیلوں میں قید افراد کو واپس پاکستان لایا جائے، ان قیدیوں کو واپس لانے کیلئے چار کروڑ بیت الما ل اور ایک کڑوڑ فارن آفس ادا کریگا۔ انہوں نے کہاکہ یہ عمل  وزیراعظم کے احساس پروگرام کا حصہ ہے۔

قیدی واپس

مزید :

صفحہ اول -